سی ڈی اے کا آپریشن، تالے توڑ کر پارلیمنٹ لاجز خالی کرا لیے

97
اسلام آباد، سی ڈی اے ٹیم کے اہلکار پارلیمنٹ لاجز میں آپریشن کے دوران تالے توڑ رہے ہیں
اسلام آباد، سی ڈی اے ٹیم کے اہلکار پارلیمنٹ لاجز میں آپریشن کے دوران تالے توڑ رہے ہیں

اسلام آباد (خبر ایجنسیاں) پارلیمنٹ لاجز میں غیر قانونی رہائشیوں کے خلاف قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے احکامات پر سی ڈی اے کے شعبہ انفورسمنٹ کی کارروائی، 80سے زاید رہائش گاہوں کے تالے توڑ کر قبضہ حاصل کرلیا۔آپریشن کے دوران ضلعی انتظامیہ اور پولیس کی بھاری نفری موجود تھی۔پارلیمنٹ لاجزکے درجنوں کمروں پر اب تک سابق اراکین قومی اسمبلی قابض تھے جبکہ مذکورہ رہائش گاہیں عام انتخابات 2018ء میں جیتنے والے اراکین قومی اسمبلی کو الاٹ ہوچکے ہیں۔سی ڈی اے کے
شعبہ انفورسمنٹ نے ایک روز قبل ان رہائش گاہوں پر قابض 119 سابق ارکان اسمبلی کو 24 گھنٹے کے اندرکمرے خالی کرنے کے حتمی نوٹس جاری کیے تھے۔چند سابق اراکین اسمبلی نے لاجز کے کمرے خالی کر کے چابیاں سی ڈی اے کے متعلقہ شعبے کو جمع کرادیں جبکہ 80 سے زاید سابق ارکان کمروں پر قابض تھے۔ 24 گھنٹے کی مہلت پوری ہونے پر سی ڈی اے انتظامیہ نے پارلیمنٹ لاجز میں قابضین کے خلاف بڑا آپریشن کیا۔کچھ سابق ارکان اسمبلی نے رضاکارانہ طور پر بھی کمرے خالی کیے جن کی صفائی ستھرائی کا کام جاری ہے۔سی ڈی اے انتظامیہ نے کسی بھی ممکنہ کشیدہ صورتحال سے بچنے کے لیے ضلعی انتظامیہ اور اسلام آباد پولیس کی بھاری نفری کو طلب کر رکھا تھا۔سی ڈی اے کی جانب سے جن سابق اراکین قومی اسمبلی کو نوٹسز دیے گئے تھے ان میں بلیغ الرحمان ، میجر (ر) طاہر اقبال ،طلال چودھری، فاروق ستار، امیر الحسنات شاہ، بلال ورک اور شیخ آفتاب بھی شامل ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ