ختم نبوت کے مسئلے پر تمام سیاسی لیڈر واضح مؤقف دیں

58

لاہور (نمائندہ جسارت) ختم نبوت کے مسئلے پر تمام سیاسی لیڈر واضح مؤقف دیں ۔سیاسی جماعتوں کے امیدواروں کی مبہم گفتگو نے کئی سوالات پیداکردیے ہیں۔ایسی پارلیمنٹ نہیں چاہیے جو ختم نبوت کے قانون کیلیے خطرہ ہو۔ختم نبوت کے مسئلہ پر اکثر جماعتوں کے انتخابی منشور بے نور نظر آرہے ہیں۔عوام ختم نبوت کے قانون کے متعلق نرم گوشہ رکھنے والی جماعتوں کو ووٹ نہیں دیں گے۔جو ختم نبوت کے باغی ہیں وہ حضور ؐ کی رسالت اور آئین پاکستان کے بھی باغی ہیں۔ان خیالات کا اظہار انٹر نیشنل ختم نبوت موومنٹ پنجاب رہنماؤں صاحبزادہ خالد محمود قاسمی،قاری احمد علی ندیم ،مولانا گلزار احمد آزاد،مولانا ثنا اللہ فاروقی،علامہ یونس حسن ، حافظ محمد شعبان صدیقی،مفتی ضیا الحق چنیوٹی، مولانا سمیع اللہ حسینی ،مولانا افتخار اللہ شاکراورحافظ محمد طیب قاسمی نے اپنے مشترکہ بیان میں کیا۔ رہنماؤں نے کہا کہ حضور ﷺ کی ختم نبوت ایمان کا حصہ ہے۔ پاکستان کے مسلمان کسی ایسے امیدوار کو ووٹ نہیں دیں گے جو ختم نبوت پر مکمل ایمان ویقین نہیں رکھتا۔ جوجماعت ختم نبوت پر یقین دہانی کروائے گی وہی ہمارے ووٹ کی حقدار ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کے مقابلوں کا اعلان دہشت گردی ہے۔54اسلامی ممالک کے سربراہا ن کی گستاخانہ خاکوں کی نمائش پر خاموشی افسوسناک ہے۔ مسلمان کیلیے آقائے دوجہاں ﷺ کی ناموس سے بڑھ کر کچھ نہیں ۔ گستاخانہ خاکوں کیخلاف احتجاج کرنا ہر مسلمان کا ایمانی فریضہ اور حضور ﷺ سے محبت کا تقاضا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو انتہاپسند ی کا طعنہ دینے والے مغربی ممالک کو باور کرانے کی ضرورت ہے کہ حقیقت میں انتہاپسند وہ ہیں جو حضور ﷺ کے خاکے بنارہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ