الیکشن کمیشن نے سرکاری محکموںمیں بھرتی پرپابندی ختم کردی

46

اسلام آباد (اے پی پی) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے وفاقی اور صوبائی سطح پر مختلف سرکاری محکموں، اداروں اور کارپوریشنوں میں بھرتی پر لگائی گئی پابندی اٹھا لی ہے تاہم نگران حکومت کسی بڑے عہدے پر تقرری نہیں کرے گی بلکہ صرف عوامی مفاد کی خاطر چھوٹی سطح پر تقرریاں کی جا سکتی ہیں۔ جمعرات کو جاری کئے گئے نوٹیفیکیشن کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان نے 11 اپریل 2018ء کو وفاقی سطح پر وزارتوں، ڈویژنوں، محکموں اور اداروں جبکہ صوبائی اور بلدیاتی حکومتوں کے زیر نگرانی اداروں میں بھرتیوں پر پابندی لگا دی تھی، صرف فیڈرل اور پراونشل پبلک سروس کمیشن کے تحت بھرتیوں کی اجازت تھی یا صرف ان اداروں میں بھرتیوں کی اجازت تھی جہاں ٹیسٹ اور انٹرویو یکم اپریل 2018ء سے پہلے ہو چکے تھے، اسی طرح یکم اپریل 2018ء سے پہلے وفاقی، صوبائی اور بلدیاتی حکومتوں سے منظور شدہ ترقیاتی اسکیموں جیسے گیس پائپ لائن کی تنصیب، بجلی کی فراہمی، پانی کی رسد کی ا سکیمیں شامل ہیں تاہم وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو عام انتخابات 2018ء تک مزید ترقیاتی اسکیموں کیلیے ٹینڈر جاری کرنے کی اجازت نہیں ۔ مختلف ترقیاتی ا سکیموں کیلیے پہلے سے مختص فنڈز کی تقسیم پر پابندی عاید کر کے ان کو منجمد کر دیا گیا تھا تاہم قومی اور صوبائی اسمبلیاں 31 مئی 2018ء کو تحلیل ہو گئیں جبکہ وفاقی اور صوبائی سطح پر نگران حکومت تشکیل دی جا چکی ہے۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے الیکشن ایکٹ 2017ء کے تحت حاصل اختیارات کے تحت سرکاری اداروں میں ملازمتوں پر عائد پابندی ختم کر دی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں