درخت ماحولیاتی آلودگی اور گرمی کا قدرتی تدراک ہے، اسامہ قریشی

31

کراچی(اسٹاف رپورٹر)ہمدردلیبارٹریز (وقف) پاکستان کے منیجنگ ڈائریکٹراور سی ای او اُسامہ قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان دنیا کے ان ممالک میں شامل ہے جو سب سے زیادہ تبدیلی آب و ہوا اور ماحولیاتی آلودگی کے خطرات سے دوچار ہیں۔ کراچی میں حالیہ گرمی کی لہر تبدیلی آب و ہوا، آلودگی ماحول اور درختوں کی بے سوچے سمجھے بے تحاشا کٹائی کا نتیجہ تھی۔ وہ بطور مہمان خصوصی گزشتہ روز ’’موسم گرما کی تعطیلات اور رمضان المبارک‘‘ کے موضوع پر ہمدرد نونہال اسمبلی کے اجلاس سے ایک مقامی ہوٹل میں خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بچوں کو چاہیے کہ وہ موسم گرما کی تعطیلات سے استفادہ کرتے ہوئے ایک جانب اگر رمضان المبارک کی برکتیں سمیٹیں تو دوسری جانب وہ ایک یا دو پودے ضرور لگائیں کیونکہ درخت ماحولیاتی آلودگی اور گرمی کی لہر کا قدرتی تدارک ہے، درخت نہ صرف ماحول کو صاف کرتے ہیں بلکہ موسم گرما کی شدت کو بھی کم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ درخت لگانے کا کام بچوں کے ساتھ ساتھ بڑوں کو بھی کرنا چاہیے۔ انہوں نے بچوں سے کہا کہ وہ خوش قسمت ہیں کہ رمضان ان کی گرمیوں کی تعطیلات میں آیا ہے، وہ اب رمضان کی برکتوں سے سکون کے ساتھ استفادہ کر سکیں گے۔ یہ بچے اس لیے بھی خوش قسمت ہیں کہ یہ شہید حکیم محمد سعید کے بچوں کے لیے بنائے گئے فورم ، ہمدرد نونہال اسمبلی میں شرکت کرتے ہیں۔ اس فورم کو بنانے کا حکیم صاحب کا مقصد بچوں کی ذہنی آبیاری، تربیت اور ان کے اندر خود اعتمادی کا جوہر پیدا کرنا تھا۔ خود اعتمادی ہی زندگی میں کامیابی کی کنجی ہے۔ اس سے قبل کلماتِ استقبال پیش کرتے ہوئے ہمدرد فاؤنڈیشن پاکستان کے ڈپٹی ڈائریکٹر حکیم محمد عثمان نے کہا کہ اُسامہ قریشی بزنس ایڈمنسٹریشن میں ماسٹر ڈگری کے حامل ہیں اور بزنس مینجمنٹ، فنانس، اوپریشنز، اسٹرے ٹیجک پلاننگ اور مارکیٹنگ کا 18 سالہ عملی تجربہ رکھتے ہیں۔ وہ اداروں کو ٹرن اراؤنڈ دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں ، ہمدرد میں بھی اس کا آغاز انہوں نے اس کی ری برینڈنگ سے کر دیا ہے۔ اس موقع پر نونہال مقررین حمنہ شکیل، ساجد علی، عائزہ شکیل، محمد عمر، راحم عمر، نمرہ اعجاز، قرۃ العین، محمد اسماعیل ملک اور علیشبا فیصل نے بھی خطاب کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں