روشن فیملی نے کئی اسپتال‘ میڈیکل کالجزا ور اسکول اور مدارس قائم کیے

143

روشن فیملی کا فلاحی کاموں میں بھی اہم کردار ہے اپنے حلقے سمیت ملک کے دیگر شہروں میں بھی روشن فیملی نے فلاحی کاموں کا بیڑا اُٹھایا ہوا ہے اس کے علاوہ اپنی برادری کے لیے بھی ملک ویلفیئر پاکستان کے سرپرست اعلی کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے ہیں ان کے فلاحی کاموں کا جانب نظریں دوڑائیں تو ایک وسیع جال بچھا ہوا نظر آتا ہے۔ علاقے میں مختلف شعبہ جات میں عوام کے فلاح و بہبود کا کام جاری ہیں جن میں تعلیم کے شعبے میں سر سید چلڈرن اکیڈمی ‘ حاجی روشن دین ہائی اسکول ‘ بحریہ اسکول ‘بحریہ کالج اور دیگر مدارس جبکہ میرپورخاص میں ملک سلیمان روشن ہائی اسکول سلیمان روشن چیریٹی سے چل رہے ہیں ۔

صحت کے شعبہ جات میں انہوں کی مختلف علاقوں میں ڈسپینسریاں عوام کو صحت کی سہولیات فراہم کر رہی ہیں جبکہ ٹنڈوآدم میں 500 بستروں پر مشتمل الحاج سلیمان روشن چیریٹی اسپتال جس میں مستحق افراد کا فری علاج کیا جاتا ہے اور حال ہی میں ضلع سانگھڑ میں اپنی نوعیت کا پہلہ سلیمان روشن میڈیکل کالج کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جس میں سانگھڑ سمیت ملک بھر سے مستحق طلبہ کو اسکالرشپ پر داخلے دیے جائیں گے جو کہ ڈاکٹریٹ کی تعلیم حاصل کر کے ملک کا سرمایہ بنیں گے ۔
ٹنڈوآدم ‘شہدادپور‘ کھڈرو‘ مقصود ورند کے علاوہ دور دراز علاقوں میں جہاں پینے کے صاف پانی کی سہولیات کا فقدان ہے وہاں آر او پلانٹس نصب کیے گئے ہیں۔
غریبوں کی مدد کے حوالے سے اگر بات کی جائے تو ٹنڈوآم اور گردونواح میں ہزاروں افراد میں ماہانہ گھریلو راشن اور نقد وضائف مقرر کیے ہوئے ہیں جبکہ مختلف اسکولوں کے بچوں کی تعلیمی ضروریات کے پیش نظر اسکول یونیفارم‘ کتابیں اور دیگر اخراجات بھی مہیا کیے جا رہے ہیں۔
رمضان المبارک میں مستحقین میں5000 خاندانوں کو راشن بیگ تقسیم کیے جاتے ہیں اس کے علاوہ اپنی انڈسٹری سے وابستہ ہزاروں مزدوروں کو بھی شوشل کارڈ سسٹم کے تحت علاج سمیت دیگر سہولیات اور ریٹائر ملازمین کو گریجویٹی اور بے گھر ورکرز کو لیبر کالونی میں گھر بھی دیے جانے والے اقدامات شامل ہیں۔ عوامی حلقوں نے انکی پیپلزپارٹی میں شمولیت کو خوش آئند قرار دیا ہے اور امید ظاہر کی ہے کہ سینیٹر بننے کے بعد مزید بہتر انداز میں عوام کی خدمت کر سکیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ