پاک بھارت مقابلہ کا دباو ، کوہلی کی زبان بند

125

بھارتی کپتان ویرات کوہلی چیمپئنز ٹرافی میں پاکستان سے میچ کی توقعات کے دباؤ سے جان چھڑانے لگے  جس سے یہ تاثر ملتا ہے کہ بڑے مقابلے کے لیے روایتی حریف  کے بارے میں ان کی زبان بند ہوگئی ہے۔

بھارتی کرکٹ ٹیم کے چیمپئنز ٹرافی کیلیے انگلینڈ روانگی سے قبل ویرات کوہلی نے ملکی میڈیا کا سامنا کیا، وہاں ہر کوئی ان سے پاکستان کیخلاف افتتاحی میچ کی تیاریوں کا جاننے کیلئے مشتاق دکھائی دیا،کوہلی نے روایتی حریف سے میچ کے بارے میں پائے جانے والے جوش و خروش کو ہوا دینے کے بجائے دبانے کی کوشش کی۔ روایتی حریفوں کا مقابلہ برمنگھم کے ایجبسٹن اسٹیڈیم میں 4 جون کو شیڈول ہے۔

کوہلی نے کہاکہ ایک کرکٹر ہونے کے ناطے اسٹیڈیم سے باہر کیا چل رہا ہے اسے ہم کنٹرول نہیں کرسکتے۔ یہ بات درست ہے کہ یہ ایک بڑا میچ ہوگا لیکن ہمارے ذہنوں میں دیگر مقابلوں سے قطعی مختلف نہیں ہے، پاک بھارت میچ کے حوالے سے بننے والا ماحول ہمارے اختیار سے باہر مگر ٹیم کیلئے یہ بھی محض دیگر مقابلوں جیسا ہی ہوگا۔28 سالہ کوہلی نے مزید کہا کہ اس میچ سے قبل بہت زیادہ جذباتی ہونے کی بھی کوئی ضرورت نہیں ہے، ہمیں خود کو کنٹرول میں رکھنا چاہیے تاکہ بہتر نتائج حاصل کرسکیں۔

علاوہ ازیں شوپیس ایونٹ کی تیاریوں کے بارے میں کوہلی نے کہاکہ گزشتہ ایونٹ میں ہمیں روہت شرما اور شیکھر دھون کی صورت میں بہترین اوپننگ جوڑی ملی تھی، اسپنرز کی کارکردگی بھی اچھی رہی لیکن فاسٹ بولرز نے اہم حصہ ڈالا تھا، اس بار بھی ہمیں صورتحال کے مطابق کھیلنے اور جلد سے جلد کنڈیشنز سے ہم آہنگ ہونے کی ضرورت ہوگی۔ویرات کوہلی نے امید ظاہر کی کہ ٹیم میں شامل سابق کپتان مہندرا سنگھ دھونی اور سینئر آل راؤنڈر یوراج سنگھ کامیابی میں اہم کردار ادا کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ