قائداعظم محمد علی جناح کا 140 واں یوم پیدائش

98

بانی پاکستان و بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کا 140واں یوم ولادت آج ( اتوار کو) ملک بھر میں قومی جوش و جذبے سے منایا جائے گا۔ محمد علی جناح 25 دسمبر 1876 کو کراچی میں پیدا ہوئے ۔

10-ali-jinah

آج ملک بھر میں قائداعظم محمد علی جناح کا یوم پیدائش انتہائی قومی جوش و جذبے منایا جارہا ہے ، دن کے آغاز پر وفاقی و صوبائی دارالحکومتوں میں توپوں کی سلامی دی جائے گی اور کراچی میں مزار قائد پر گارڈز کی تبدیلی کی پروقار تقریب بھی منعقد ہوئی۔

14-ali-jinah

قائداعظم محمد علی جناح کے یوم پیدائش موقع پر تمام بڑے و چھوٹے شہروں میں سرکاری و غیر سرکاری تنظیموں، پاکستان مسلم لیگ، تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ ، نظریہ پاکستان فاؤنڈیشن ، مرکزیہ مجلس اقبال پاکستان اور بعض دیگر تنظیموں کے اشتراک سے خصوصی تقریبات ، سیمینارز ، کانفرنسز ، مذاکروں، مباحثوں کا انعقاد کیا جارہا ہے ۔ جن میں قائداعظم محمد علی جناح کے کارناموں ، ان کی سیاست بصیرت اور پاکستان کو حاصل کرنے کے لئے ان کی انتھک محنت کے حوالے سے کی جانے والی کوششوں پر روشنی ڈالی جارہی ہے۔

11-ali-jinah

قائد اعظم محمد علی جناح ایک عہد کا نام ہے، قائد اعظم محمد علی جناح پچیس دسمبر اٹھارہ سو چھیتر میں پیدا ہوئے، انہوں نے ابتدائی تعلیم کا آغاز 1882 میں کیا، قائد اعظم 1893 میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لئے انگلینڈ روانہ ہوگئے جہاں آپ اعلیٰ تعلیم حاصل کی، 1896 میں قائد اعظم نے بیرسٹری کا امتحان پاس کیا اور وطن واپس آگئے ۔

9-ali-jinah

محمد علی جناح نے اپنی سیاسی سرگرمیوں کا آغاز 1906 میں انڈین نیشنل کانگریس میں شمولیت سے کیا تاہم 1913 میں محمد علی جناح نے آل انڈیا مسلم لیگ میں شمولیت اختیار کرلی، آپ نے خودمختار ہندوستان میں مسلمانوں کے سیاسی حقوق کے تحفظ کی خاطر مشہور چودہ نکات پیش کیے۔

12-ali-jinah

پچیس دسمبراٹھارہ سوچھیترکو کراچی میں جناح پونجا کے گھرجنم لینے والے بچے نے برصغیر کی نئی تاریخ رقم کی اور مسلمانوں کی ایسی قیادت کی جس کے بل پر پاکستان نے جنم لیا ، بہت کم لوگ ایسے ہوتے ہیں جو تاریخ کا دھارا بدل دیتے ہیں اور ایسے لوگ تو اور بھی کم ہوتے ہیں جو دنیا کا نقشہ بدل کر رکھ دیتے ہیں۔

قائد اعظم محمدعلی جناح کی زندگی جرات،انتھک محنت ،دیانتداری عزم مصمم ،حق گوئی کاحسن امتزاج تھی، برصغیر کی آزادی کے لئے بابائے قوم کامؤقف دو ٹوک رہا،  نہ کانگریس انہیں اپنی جگہ سے ہلا کسی نہ انگریز سرکار ان کی بولی لگا سکی ۔

8-ali-jinah

پاکستانیوں کے حوالے سے بھی ان کا وژن واضح تھا ، 25 مارچ 1948 کو مشرقی پاکستان میں سرکاری افسران سے خطاب کے الفاظ سنہری حروف سے لکھنے کے قابل ہیں ، قائد اعظم نے سرکاری افسران کو مخاطب کرتے ہوئے فرمایا “آپ کسی بھی فرقے ذات یا عقیدے سے تعلق کیوں نہ رکھتے ہوں اب آپ پاکستان کے خادم ہیں” وہ دن گئے جب ملک پر افسرشاہی کا حکم چلتا تھا، اب آپ کو اپنا فرض منصبی خادموں کی طرح انجام دینا ہے، آپ کو کسی سیاسی جماعت سے کوئی سروکار نہیں رکھنا چاہئے۔

13-ali-jinah

تعمیر پاکستان بلاشبہ ایک مشکل مرحلہ تھا مگر تکمیل پاکستان اس سے بھی کٹھن کام ہے، آج بانی پاکستان کے یوم ولادت کے دن تجدید عہدکرتے ہیں کہ ہم ہر قسم کے نسلی ،مذہبی اور فرقہ ورانہ تعصبات سے بالاتر ہو کرصرف اورصرف ملک کی تعمیر و ترقی میں کردار ادا کریں گے۔ یہ تبھی ممکن ہوگا جب قائدکے افکا ر کو سمجھا جائے اور ان پر عمل کیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ