سی پیک منصوبہ پاک چین تعلقات کا عکاس ہے،وزیراعظم نوازشریف

121

وزیراعظم محمدنوازشریف نے کہا ہے کہ چین پاک اقتصادی راہداری اور اس سے متعلقہ پراجیکٹ دونوں ممالک کے عوامی تعلقات کا عکاس ہیں۔

انہوں نے یہ بات چین کی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے انٹرنیشنل ڈیپارٹمنٹ کے نائب وزیر ژینگ ژیاﺅسونگ سے گفتگوکرتے ہوئے کہی جنہوں نے پیر کو یہاں وزیراعظم ہاﺅس میں ان سے ملاقات کی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اس منصوبہ نے درحقیقت دونوں ممالک کے دوستانہ تعلقات کو ٹھوس معاشی شراکت داری میں تبدیل کیا ہے ۔

وزیراعظم نے انہیں بتایا کہ چائناپاکستان اکنامک کوریڈورکے تحت مختلف پراجیکٹ پر کام کرنے والے چینی بھائیوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے 15 ہزار اہلکاروں پر مشتمل ملٹری اور سویلین آرمڈ فورسز کی ایک خصوصی سکیورٹی ڈویژن تشکیل دی گئی ہے۔

وزیراعظم نے چین کے نائب وزیرکے دورہ پاکستان کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان اورچین قریبی دوست، پڑوسی اور پارٹنرہیں ۔ انہوں نے آزادانہ تجارتی معاہدے کے فوائد کو اجاگر کیا جو بڑھتی ہوئی دو طرفہ تجارت میں واضح ہیں۔ تجارتی حجم اس سال 18 ارب ڈالرسے تجاوز کر گیا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ چین اورپاکستان کے درمیان زبردست تجارتی صلاحیت سے دونوں ممالک کے دوطرفہ تجارتی حجم میں مزید اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے بلا امتیاز ہر قسم کی دہشت گردی کے خاتمے کا عزم کر رکھا ہے اور دہشت گردوںکے خلاف جاری فوجی آپریشن کے بڑے مثبت نتائج نکلے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ دہشت گردی اورانتہا پسندی کے خلاف جنگ کو اس کے منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا اوردہشت گردوں کی کمر اور نیٹ ورک کو پہلے ہی توڑاگیا ہے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ ژینگ ژیاﺅ سونگ کے دورہ سے دونوں ممالک کے درمیان پرتپاک تعلقات مزید مضبوط ہونگے۔

اس موقع پر ژینگ ژیاﺅ سونگ نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کا نام چین کے ہر گھر میں لیا جاتا ہے۔ پاکستان کی موجودہ حکومت کے دور میں پاکستان اور چین کی دوستی ایک نئے دور میں داخل ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم چائنا پاکستان اکنامک کوریڈور کے تحت مختلف پراجیکٹ بالخصوص پنجاب میں منصوبوں پر بڑے مطمئن ہیں جن پرتیزی سے کام جاری ہے۔

چین کے نائب وزیر نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان تیزی بڑتے ہوئے تعلقات کے ساتھ کمیونسٹ پارٹی آف چائنا اور پاکستان مسلم لیگ ن کے درمیان تعلقات میں بھی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کی سیاسی جماعتوں کے درمیان وفودکی سطح پر تبادلے خوش آئند ہیں ہمیں دونوں ممالک اور سیاسی جماعتوں کے اعلی سطحی تبادلوں کو جاری رکھنا چاہئے۔

انہوں نے کہاکہ چین کی ترقی میں کمیونسٹ پارٹی کا کردار بڑا اہم ہے کمیونسٹ پارٹی کے اراکین کی موجودہ تعداد 8.9 ملین ہے اور پارٹی ڈسپلن پر سختی سے عمل کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم آئندہ برس پاکستان مسلم لیگ کے وفد کے دورہ چین کے منتظر ہیں۔ انہوںنے کہا کہ ہمیں خوشی ہوگی کہ وفد میں وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نوازشریف بھی شامل ہوں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ