میانمار میں مسلمانوں کو نسل کشی کا سامنا ہے، ملائیشیا

104

ملائیشیا نے روہنگیا مسلمانوں کی مشکلات کے تناظر میں کہا ہے کہ اْسے میانمار میں فوج کے کریک ڈاؤن کے تحت نسل کشی کا سامنا ہے۔

جرمن ذرائع ابلاغ کے مطابق ملائیشیا کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ ایک حقیقت ہے کہ ایک خاص نسل کے لوگوں کو نسلی تعصب کی بنیاد پر میانمار سے باہر نکلنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ فوجی کریک ڈاؤن کی وجہ سے ہزاروں روہنگیا مسلمان ہمسایہ ملکوں میں پناہ لینے پر مجبور ہیں اور 56 ہزار کے قریب ملائیشیا بھی پہنچ چکے ہیں۔ دوسری جانب اقوام متحدہ کے سابق سیکرٹری جنرل کوفی عنان راخائن میں روہنگیا مسلمانوں کی حالت زار کا جائزہ لینے کے لیے پہنچ گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ