دل کی موت…………اقبال

95

وہ قوم کہ فیضانِ سماوی سے ہو محروم
حد اْس کے کمالات کی ہے برق و بخارات

ہے دل کے لیے موت مشینوں کی حکومت
احساسِ مروّت کو کْچل دیتے ہیں آلات