جہانگیر ترین جلدپی ٹی آئی چھوڑ دیں گے‘ مراد علی شاہ

61

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے دعویٰ کیا ہے کہ جہانگیر ترین زیادہ دیر پاکستان تحریک انصاف میں نہیں رہیں گے۔مراد علی شاہ سے قبل پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شہلا رضا نے دعویٰ کیا تھا کہ جہانگیر ترین پیپلز پارٹی میں شامل ہونے جارہے ہیں تاہم جہانگیر ترین نے اس قسم کی تمام قیاس آرائیوں کی تردید کی اور بعدازاں شہلا رضا نے اپنی ٹوئٹ بھی ڈیلیٹ کر دی۔لانڈھی سائٹ ایسوسی ایشن سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے بھی جہانگیر ترین سے متعلق دعویٰ کیا ہے کہ جہانگیر ترین زیادہ دیر پی ٹی آئی میں نہیں رہیں گے۔وفاقی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مرادعلی شاہ کا کہنا تھا کہ تین سال میں وفاق نے صوبوں کو دیا کیا ہے؟ چھیننے میں لگا ہے، ہمارا 85 فیصد ٹیکس ریونیو وفاق اکٹھا کرتا ہے، زیرو فیصد گروتھ کی وجہ سے منصوبے تاخیر کا شکار ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ہر ہفتے چیف سیکرٹری کو کہتے ہیں کہ عمارتیں کیوں نہیں بنا رہے،کچھ شر پسند ہیں جو ہر روز نئے نوٹیفکیشن نکلوا دیتے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ صنعتی علاقے کو ترقی دلانے کے لیے کوشاں ہیں، صنعتکاروں کے ساتھ ملکر صنعتی علاقے کو ترقی دلائیں گے۔غیرفعال بلدیاتی اداروں اور بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ قانون کے مطابق بلدیاتی اداروں کے انتخابات نئی مردم شماری کے تحت ہونے ہیں لیکن اس وقت منظور شدہ مردم شماری 1998 کی ہے، 2017 کی مردم شماری پر چاروں صوبوں کو شدید تحفظات تھے اور ان کی وجہ سے پارلیمنٹ نے کہا تھا کہ 5فیصد کی دوبارہ تصدیق کرنی ہے لیکن اب تک کچھ نہیں ہو سکا۔انہوں نے کہا کہ میں نے فی الفور نئی مردم شماری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چاروں صوبوں کو اس مردم شماری پر تحفظات ہیں تو ایک غلط چیز کو کیسے منظور کر سکتے ہیں، اس سلسلے میں مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں فیصلہ ہو گا۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں کچھ مقامات پر کووڈ بہت زیادہ پھیلا ہوا ہے جس کی وجہ سے میں نے بین الصوبائی ٹرانسپورٹ پر پابندی کا مطالبہ کیا تھا لیکن وفاقی حکومت نے اس تجویز کو مسترد کردیا اور اس کی جگہ دو دن کاروبار اور ٹرانسپورٹ کی بندش کا فیصلہ دیا ہے۔