خیرپور، پولیس افسر کو بے دردی سے قتل کے بعد جلائے جانے کا انکشاف

51

خیر پور(مانیٹرنگ ڈیسک)خیرپور میں اے ایس آئی بلاول وسان کو بے دردی سے قتل کرنے کے بعد لاش کو گاڑی سمیت جلائے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔18 نومبر کی رات کو بھرگنی کے قریب سے جلی ہوئی اپنی ڈبل کیبن گاڑی سے اے ایس آئی بلاول وسان کی
مکمل جھلسی ہوئی ناقابل شناخت لاش ملی۔بلاول وسان کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انکشاف ہوا کہ اے ایس آئی کو بے دردی سے قتل کرنے کے بعد لاش کو جلایا گیا، بلاول وسان کے دونوں ہاتھ اور ٹانگیں کاٹی گئی تھیں جب کے اس کی کھوپڑی اور پسلیوں میں بھی فریکچر پایا گیا ہے۔ملزمان نے لاش کو گاڑی سمیت جلا کر قتل کو حادثے کا رنگ دینے کی کوشش کی۔پولیس کے مطابق قتل کے شبہے میں بلاول وسان کے دو دوستوں کو حراست میں لیکر تفتیش شروع کر دی ہے، حقائق جلد سامنے آ جائیں گے، گرفتار دوست فراز راجپوت کو گزشتہ روز کراچی سے حراست میں لیا گیا تھا جو گاڑی میں آگ لگنے کے وقت فرار ہوا تھا اور اسے عینی شاہدین نے بھی شناخت کیا تھا۔فراز راجپوت نے بھی گرفتاری کے بعد تصدیق کی تھی کہ گاڑی سے ملنے والی لاش اے ایس آئی بلاول وسان کی ہے۔