لاڑکانہ ،فرائض میں غفلت برتنے پر افسران سمیت19 اہلکار برطرف

36

لاڑکانہ(نمائندہ جسارت) لاڑکانہ میں لاک ڈائون کے دوسرے روز فوج کی جانب سے فرائض سرانجام دینے والے اہلکاروں میں ماسک تقسیم کیے گئے، فوج اور رینجر افسران کا ضلع بھر کا دورہ، فرائض میں غفلت برتنے پر افسران سمیت 19 پولیس اہلکار نوکریوں سے برطرف کر دیے گئے، متعدد شہری زیرحراست۔ تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت کی جانب سے صوبے بھر میں لاک ڈائون کے دوسرے روز بھی فوج، رینجرز اور پولیس افسران کی جانب سے ضلع بھر کا دورہ کیا گیا اور لاک ڈائون کی صورتحال کا جائزہ لیا۔ اس سلسلے میں رینجرز کے ونگ کمانڈر کرنل محمود، پاک آرمی کے میجر اشفاق، ایس ایس پی لاڑکانہ اور اے ایس پی رضوان نے شہر سمیت ضلع کی مختلف تحصیلوں کا دورہ کیا اور لاک ڈائون پر سختی سے جاری عملدرآمد کا جائزہ لیا جبکہ پاک آرمی کے افسران کی جانب سے فرائض سرانجام دینے والے اہلکاروں میں فیس ماسک تقسیم کیے گئے۔دوسری جانب ایس ایس پی لاڑکانہ کی جانب سے فرائض میں غفلت برتنے پر سب انسپکٹر اللہ ودھایو، سجاد حسین، اے ایس آئی ودایت اللہ، علی روش، منظور علی، مختار علی، ہیڈ کانسٹیبل ارشاد علی، عبدالغفور، سپاہی نوید علی، برکت علی، ممتاز علی اور امیر علی سمیت دیگر کو نوکری سے برطرف کر دیاگیا جبکہ ڈبل سواری اور لاک ڈائون کے حوالے سے خلاف ورزی کرنے پر متعدد افراد کو حراست میں لے لیا گیا اور سول تھانہ سمیت مختلف تھانوں پر متعدد مقدمات بھی درج کیے گئے۔ آرمی، رینجرز اور پولیس افسران کا کہنا ہے کہ لاک ڈائوں عوام کی اپنی بھلائی کیلیے لگایا گیا ہے تاکہ وہ کورونا وائرس سے محفوظ رہیں اور ایک قوم بن کر ہم اس پر قابو پا سکیں۔ افسران نے شہریوں سے اپیل کی کہ وہ سندھ حکومت کی بتائی گئی ہدایات پر عملدرآمد کریں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کا ساتھ دیں۔