نمرتا نے خودکشی نہیںکی، موت دم گھٹنے یا آکسیجن نہ ملنے کی وجہ سے ہوئی

49

لاڑکانہ(مانیٹرنگ ڈیسک)آصفہ ڈینٹل کالج لاڑکانہ کی طلبہ نمرتا کی ہلاکت کے کیس میں لیاقت یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز جامشورو نے نمرتا کی ہسٹوپیتھالوجی ایگزامنیشن رپورٹ لاڑکانہ پولیس کے حوالے کردی۔رپورٹ کے مطابق نمرتا کی موت بظاہر دم گھٹنے یا آکسیجن نہ ملنے کی وجہ سے ہوئی۔لیاقت یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز جامشورو کی جانب سے 26 ستمبر کو مرتب کی گئی نمرتا کی ہسٹوپیتھالوجی ایگزامنیشن رپورٹ کے مطابق زہر دینے یا غیر طبعی موت کی صورت میں جسم کے اعضاء میں تبدیلی
رونما ہوتی ہے لیکن نمرتا کے دل، گردوں، پھیپھڑوں اور جگر میں کوئی غیر معمولی تبدیلی نہیں پائی گئی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ رپورٹ میں نمرتا کی موت کا سبب ظاہر نہیں کیا گیا۔ شواہد یہی بتاتے ہیں کہ نمرتا نے خودکشی کی ہے اور اب تک اس کے قتل کے کوئی شواہد نہیں ملے۔
نمرتا ہلاکت کیس