ملک کی بھیانک صورتحال سے نکلنے کیلئے متفقہ قومی ایکشن پلان ناگزیر ہے،امیر العظیم

88

لاہور(نمائندہ جسارت) سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان امیر العظیم نے کہاہے کہحکومت، ادار ے اور معاشرہ سب بے حسی کا شکار ہیں ۔افسوس یہ ہے کہ خطے میں پاکستان بے روزگاری کے حوالے سے تیسرے نمبر پر آگیاہے ، اس بھیانک صورتحال سے نمٹنے کے لیے ایک متفقہ قومی ایکشن پلان کی ضرورت ہے جس میں حکومت ، اپوزیشن اور دوسرے اسٹیک ہولڈر زآن بورڈ ہوں ۔انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ حکومت نے پاکستان میں عالمی چائلڈ لیبر ڈے اس ڈھٹائی کے ساتھ منایا ہے کہ ملک میں2 کروڑ بچے چائلڈ لیبر پر مجبور ہیں لیکن کسی سطح پر ان کے تحفظ کے لیے اقدامات نہیں کیے جارہے ۔حکومت تعلیم کو عام کرنے کے بلند و بانگ دعوے کرتی ہے مگر 2 کروڑ50 لاکھ بچے اسکولوں سے باہر ہیں ۔ ان بچوں کو جرائم پیشہ بننے کے لیے چھوڑ دیا گیا ہے ۔امیر العظیم نے کہاکہ پاکستان اس وقت ریاست مدینہ تو دور کی بات ، درمیانے درجے کی عام ریاست بھی نہیں جس میں خواتین اور بچوں کو تحفظ حاصل ہو ۔