پاکستان بار کونسل نے بدعنوان اور نا اہل ججوں کی نشاندہی کیلئے کمیٹیاں بنادیں

96

اسلام آباد(آن لائن)پاکستان بار کونسل نے بدعنوان اور نا اہل ججز کی نشاندہی کے لیے خصوصی کمیٹیاں تشکیل دیدی ہیں جس کی روشنی میں ریفرنس تیار کر کے صدر مملکت اور سپریم جوڈیشل کوبھجوائے جائیں گے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان بار کونسل کے نائب چیئرمین امجد شاہ نے بتایا کہ چاروں صوبوں اور وفاقی دارالحکومت میں خصوصی کمیٹیاں تشکیل دے دی ہیں جو بدعنوان اور نا اہل ججز کی نشاندہی کریں گی تا کہ ان کے خلاف ریفرنس تیار کیا جائے، کمیٹیاں ایک ماہ میں اپنی رپورٹ جمع کرائیں گی جس کے بعد بار کونسل ان کے خلاف ریفرنس تیارکرکے صدر مملکت اور سپریم جوڈیشل کونسل (ایس جے سی) میں مزید کارروائی کے لیے جمع کرائے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ خصوصی کمیٹیاں ریفرنس کی بنیاد کے لیے تمام تر شواہد بھی اکٹھے کریں گی اس کے ساتھ کمیٹی ارکان ان ججز کے دیے گئے فیصلوں کا بھی جائزہ لیں گے۔ ریفرنس دائر کیے جانے تک ججز کے نام منظرِ عام پر نہیں لائے جائیں گے اور نہ ہی کسی کو ان کی کردار کشی کی اجازت دی جائے گی اس کے ساتھ ساتھ کمیٹی ارکان کے نام بھی خفیہ رکھے جائیں گے۔خیال رہے اس سے قبل پاکستان بار کونسل نے ملک بھر میں 14 جون کو وکلا کی ہڑتال کا اعلان کیا تھا جب سپریم جوڈیشل کونسل عدالت عظمیٰ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس کریم آغا خان کے خلاف ریفرنس کی سماعت کرے گی۔دوسری جانب پنجاب کی مختلف بار ایسوسی ایشنز سے تعلق رکھنے والے وکلا کا ایک گروہ اسلام آباد کے ایک ہوٹل میں اکٹھا ہوا اور پی بی سی ہڑتال کی مخالفت کا اعلان کیا۔