سابق پی آئی او چوہدری رشید و دیگر 4 اعلیٰ حکام پر ریفرنس دائر کرنے کی منظوری

95

اسلام آباد ( نمائندہ جسارت) سابق پی آئی او چودھری رشید احمد اور دیگر اعلیٰ حکام کیخلاف نیب نے ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ،ایک ایڈورٹائزنگ ایجنسی سے بھی پوچھ گچھ ہوگی ۔قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب ہیڈکوارٹرز اسلام آبادمیں منعقد ہوا۔ اجلاس میں ڈپٹی چیئرمین نیب، پراسیکیوٹر جنرل اکاؤنٹیبلٹی، ڈی جی آپریشن، ڈی جی نیب راولپنڈی اور دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔ اجلاس میں چودھری رشید احمد، سابق ڈائریکٹر جنرل پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ ملزمان نے مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے قومی خزانے سے 28.5 ملین روپے کی رقم ایڈورٹائزنگ ایجنسی کے ساتھ مل کر نکلوانے کی کوشش کی جس کو بروقت کارروائی کے ذریعے پی اے آر سی نے ناکام بنا دیا۔ بورڈ کے اجلاس میں نعیم الدین خان سابق صدر بینک آف پنجاب اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طو رپر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے بینک آف پنجاب کے شیئرز کی خرید و فروخت میں انسائڈ ٹریڈنگ کرنے کا الزام ہے۔ جس سے قومی خزانے کو مبینہ طور پر 10.385 ملین روپے کا نقصان پہنچا ۔اجلاس میں گلاب خان سیکرٹری کراچی پورٹ ٹرسٹ آفیسرز کو آپریٹو ہائوسنگ سوسائٹی اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے سرکاری زمین کو غیر قانونی طور پر قواعد و ضوابط کے خلاف من پسند افراد کو الاٹ کرنے کا الزام ہے۔ جس سے قومی خزانے کو مبینہ طور پر 110 ملین روپے کا نقصان پہنچا ۔نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں منظور قادر سابق ڈی جی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کراچی اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے نہر اخیام کراچی میں سرکاری زمین میسرز فرینڈز ایسوسی ایٹس کو مبینہ طور پر غیر قانونی طور پر الاٹ کرنے کا الزام ہے۔ جس سے قومی خزانے کو مبینہ طور پر 3 ارب روپے کا نقصان پہنچا۔قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں 3 انکوائریوں کی منظوری دی گئی جن میں سید طلعت محمود سابق چیف آپریٹنگ آفیسر زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ اور دیگر ناصر اقبال بوسال رکن قومی اسمبلی اور سابق ڈپٹی کمشنر امداد اللہ بوسال سابق سیکرٹری ٹو وزیراعلیٰ پنجاب اور میسرززرداری گروپ پرائیویٹ لمیٹڈ شامل ہیںنیب کے ایگزیکٹو بورڈ نے پنجاب رینیوایبل انرجی کمپنی لمیٹڈ کی انتظامیہ/ افسران/ اہلکاران اور دیگر اور قائداعظم ونڈو پاور کمپنی لمیٹڈ کی انتظامیہ /افسران/اہلکاران اور دیگر کے خلاف اب تک عدم شواہد کی بنیاد پر قانون کے مطابق انکوائری ختم نہ کرنے کی منظوری دی۔چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ میگا کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانا نیب کی اولین ترجیح ہے۔ نیب ’’احتساب سب کے لیے‘‘ کی پالیسی پر سختی سے عمل پیرا ہے۔ ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ اور عوام کی لوٹی گئی رقم کی واپسی کے لیے تمام وسائل بروئے کار لارہے ہیں۔