حکومت احمقانہ فیصلوں سے قومی سلامتی کو خطرے میں ڈال رہی ہے،لیاقت بلوچ

120

لاہور (نمائندہ جسارت)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ عمران خان حکومت اپنے غلط اور غرور پر مبنی احمقانہ فیصلوں سے قومی سلامتی کو خطرات میں ڈال رہی ہے اوردہشت گردی کے خلاف دی جانے والی قربانیوں ، پاک چین اقتصادی راہداری سے قومی معیشت کے لیے بہتر امکانات کو ضائع کر رہی ہے ۔یہ بات انہوں نے منصورہ میں جے آئی یوتھ کے وفد سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہی ۔ لیاقت بلوچ نے کہا کہ جب حکومتیں نااہلی اور عوام دشمنی کی انتہا کو چھونے لگیں تو اپوزیشن جماعتوں کے لیے عوامی جذبات کی ترجمانی کے لیے باہم رابطوں کے سوا کوئی اور آپشن باقی نہیں رہتا ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی نے ہمیشہ قومی ترجیحات اور عوامی مسائل کے حل کے لیے آواز بلند کی ہے ۔ اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ کم از کم ایجنڈے پر اتفاق ہو بھی جائے لیکن جماعت اسلامی مہنگائی ، بے روزگاری ، کرپشن کے خاتمے اور آئین و جمہوریت کی حفاظت کے لیے اپنا قومی کردار ادا کرے گی ۔ انہوںنے کہاکہ حکومت اپوزیشن جماعتوں کی افطار ڈنر میں شرکت اور باہمی تبادلہ خیال پر حواس باختگی کے بجائے اپنا اسلوب اور اعمال درست کرے۔ پی ٹی آئی حکومت نے غیر جانبدارانہ احتساب کا تصور غرق کر کے کرپٹ مافیا کو تازگی اور مظلومیت دی ہے ۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ پاکستان کو حریت فکر ، اتحاد و وحدت ، یکجہتی اور نظریاتی پختگی کی ضرورت ہے ۔ نوجوان قائداعظم کے اصول و پیغام اتحاد ، ایمان ، تنظیم کے جذبے کو از سر نو زندہ کریں ۔ جماعت اسلامی عید کے بعد مہنگائی ، بے روزگاری ، آئی ایم ایف کی غلامی کے خلاف اور پاک چین اقتصادی راہداری کے منصفانہ نفاذ و حفاظت کے لیے عوامی مارچ تحریک شروع کرے گی ، نوجوان اس کا ہراول دستہ ہوں گے۔