عوام کی زندگی میں واضح تبدیلی حکومت کا منشور ہے،وزیر اعظم عمران خان 

63
اسلام آباد:وزیر اعظم عمران خان سے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور مشیر امین اسلم ملاقات کررہے ہیں

اسلام آباد(صباح نیوز،اے پی پی)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ عوام کی زندگی میں واضح تبدیلی حکومت کا منشور ہے۔ تعلیم، صحت اور دیگر شعبوں میں تبدیلی کا عمل مستحکم کریں گے۔وزیراعظم عمران خان سے کوہاٹ اور ڈیرہ اسماعیل خان کے ارکان قومی اسمبلی شاہد احمد، نورین فاروق ابراہیم، شاندانہ گلزار اور محمد یعقوب شیخ نے ملاقات کی اور انھیں اپنے حلقوں کے مسائل سے آگاہ کیا۔ ملاقات میں وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق، ترجمان ندیم افضل چن اور سیکرٹری جنرل ارشد داؤد بھی موجود تھے۔ اس موقع پر وزیراعظم نے ممبران کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرانے کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام کی بہتری کے اقدامات کو مزید آگے بڑھائیں گے۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ عوام الناس کی زندگیوں میں حقیقی معنوں میں واضح تبدیلی لانا حکومت کا منشور ہے۔ علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک میں غیرملکی سرمایہ کاری میں سہولت کے لیے تمام ممکنہ کوششیں کی جا رہی ہیں۔انہوں نے جمعہ کو اسلام آباد میں ملائیشیا کے بزنس گروپ EDOTCO کے چیئرمین سے ملاقات میں انہیں پاکستان کی طرف سے کاروبار میں آسانی کے لیے کیے گئے اقدامات سے متعلق آگاہ کیا۔ملائیشین گروپ کے چیئرمین نے ڈیجیٹل پاکستان پروگرام میں شراکت داری میں دلچسپی ظاہر کی۔انہوں نے کہا کہ گروپ پاکستان میں پچیس لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری کا خواہشمند ہے۔یہ گروپ پہلے ہی پاکستان میں دس کروڑ ڈالر سے زائد کی سرمایہ کاری کر رہا ہے۔ملاقات میں سرمایہ کاری بورڈ کے چیئرمین کے علاوہ پاکستان میں ملائیشیا کے ہائی کمشنر اکران محمد ابراہیم ،ڈاکٹرنائیک RAMLA ، سریش نارائن سنگھ سدھو اور عارف حسین بھی موجود تھے۔دریں اثناء وزیراعظم عمران خان سے چائنہ مشینری انجینئرنگ کارپوریشن (سی ایم ای سی) کے بورڈ کے چیئرمین ژانگ چن اور ہوان ڈی آر گروپ کے سربراہ ہوانگ ڈاؤ یوآن نے جمعہ کو یہاں ملاقات کی۔ سی ایم ای سی کے چیئرمین نے وزیراعظم کو ماضی میں پاکستان میں کمپنی کی طرف سے مختلف منصوبوں بالخصوص توانائی کے شعبہ میں کیے جانے والے منصوبوں کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے وزیراعظم کو جھنگ میں 1263 میگاواٹ پاور پلانٹ پر پیشرفت سے بھی آگاہ کیا جو تکمیل کے قریب ہے۔ سی ایم ای سی اور ہوان ڈی آر گروپ کے اعلیٰ عہدیداروں نے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام اور زرعی شعبہ میں مزید سرمایہ کاری میں اپنی گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان نے زرعی شعبے کے منصوبوں میں چین اور دیگر دوست ممالک کی متوقع معاونت کے حوالے سے صوبوں سے سفارشات طلب کرلیں۔صوبوں کو ایک ہفتے میں اپنی سفارشات پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ وزیراعظم نے کہا ہے کہ زراعت کے شعبے کا فروغ اولین ترجیح ہے، زراعت کے شعبے میں ملکی صلاحیت سے مکمل طور پر مستفید ہونے کے سلسلے میں وفاقی حکومت اس سلسلے میں صوبائی حکومتوں کو ہر ممکنہ معاونت فراہم کرے گی۔ جمعہ کووزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت ایگریکلچر اور فوڈ پراسسنگ سے متعلق اعلی سطح کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وفاقی وزیر برائے فوڈ سیکیورٹی کے علاوہ صوبائی وزرا برائے محکمہ زراعت، وفاقی و صوبائی سیکریٹریز اور زراعت سے متعلقہ شعبوں کے سربراہان نے شرکت کی۔