عرب اتحاد کی حدیدہ میں کارروائی‘ 10 شہری ہلاک

37

صنعا(انٹرنیشنل ڈیسک) یمن میں سعودی عسکری اتحاد کی ایک فضائی کارروائی کے نتیجے میں 10 شہری ہلاک ہو گئے۔ ذرائع کے مطابق حملہ حدیدہ میں حوثی باغیوں کے ایک ٹھکانے پر کیا گیا۔ کارروائی میں ایک ہی خاندان کے 8 افراد مارے گئے۔ اس سے قبل عرب اتحاد اور امریکی وزیر خاجہ مائیک پومپیو کی جانب سے کہا گیا تھا کہ یمن میں شہری ہلاکتوں کی روک تھام کے لیے کوششیں کی جارہی ہیں۔ دوسری جانب یمنی فوج نے بھی ایک کارروائی میں صعدہ میں مزید پیش قدمی کرتے ہوئے اہم مقامات سے باغیوں کو نکال باہر کیا۔ اس کے ساتھ ساتھ ظاہر یہ اور باقم کے اضلاع میں بھی باغیوں کے ٹھکانوں پر بڑے حملے کیے گئے۔لڑائی میں 9حوثی باغی ہلاک اور بڑی تعداد میں فرار ہوگئے۔ کتاف ضلع میں سرکاری فوج نے بارودی سرنگوں کی صفائی کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ 2 روز کے دوران 300بارودی سرنگیں تلف کی گئیں۔ خبررساں اداروں کے مطابق یمن کے وزیر اطلاعات معمر اریانی نے خبردار کیا ہے کہ حوثی ملیشیا اپنے زیر کنٹرول علاقوں میں تعلیمی نصاب کے اندر خطرناک حد تک تبدیلیاں کر رہی ہے۔ اریانی نے اپنی ایک ٹوئٹ میں کہا کہ حوثی ملیشیا کی جانب سے یمنی بچوں کے ذہنوں میں گمراہ کن افکار اور نظریات ڈالے جا رہے ہیںْ ۔ حوثیوں نے اپنے زیر کنٹرول علاقوں میں دانستہ طور پر تعلیمی نصابوں کو تبدیل کر دیاہے۔ اس حوالے سے ملیشیا کے بانی کے متعلق مواد شامل کیا گیاہے۔ علاوہ ازیں اسکولوں میں صبح کے وقت قطار میں کھڑے طلبہ کو حوثیوں کی جماعت سے متعلق فرقہ وارانہ اور نسل پرستانہ نعرے لگانے پر مجبور کیا جاتا ہے۔ حوثی ملیشیا نے اپنی صفوں میں ہونے والے بھاری جانی نقصان کی تلافی کے لیے بچوں کی بھرتی کا سہارا لیا۔ اس سلسلے میں مارچ 2015ء کے بعد طلبہ کے لیے اشتعال انگیز مذہبی تقاریر اور اسکولوں کے میدانوں میں عسکری تربیت کے کورسز کے ذریعے 2ہزار 419 بچوں کو دام میں پھانسا گیا۔
یمن/شہری ہلاک

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.