ڈی ایچ کیو ز اسپتا لو ں کوحفظان صحت کے اصولوں کے مطابق بنایا جائے

57

پشاور(اے پی پی)خیبرپختونخوا کے وزیر صحت ڈاکٹر ہشا م انعا م اللہ خا ن نے تما م ڈی ایچ کیو ز اسپتالوں کے میڈ یکل سپر نٹنڈ نٹ سے کہا ہے کہ اپنے اپنے اداروں کو فو ری طو ر پربنیادی اورحفظان صحت کے اصولوں کے مطابق بنا ئیں اور اسپتا ل میں مو جو د تما م سہولیا ت، اُ س کی کا کر دگی سے متعلق حا لت اور افرادی قو ت سمیت جز وی یا مکمل یا کمی پر مبنی تفصیلی رپو رٹ تین ہفتو ں کے اند ر اندر حکو مت کو بھجوائیں، اس رپو رٹ میں ان سہو لیا ت کی کمی یا غیرموجودگی کی وجو ہا ت اور اُن کی فو ری فراہمی کیلیے تجا ویز بھی درج ہو نی چا ہیے، رپورٹ میں ہر ادارے کی ضروریا ت تر جیحا ت کے مطابق درج کر کے بھجو ائیں تا کہ حکو مت دستیا ب وسائل کے تحت تر تیب سے فراہمی کا بندوبست کر ے۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صوبا ئی وزیرڈاکٹرہشام انعام اللہ خان نے کہاکہ خیبرپختونخواکے تمام میڈیکل سپرنٹنڈنٹ( ایم ایس) کو ہسپتا لو ں میں مو جو د ملا زمین کی ڈیو ٹی شیڈول بنا نے، اس پر عملدرآمد یقینی بنا نے اور ڈیو ٹی میں کو تا ہی بر تنے والو ں کے خلا ف ای اینڈ ڈی رولز کے مطا بق بر وقت تا دیبی کار روائی کر نے کی سختی سے ہدایت کی۔ اُنہو ں نے تما م ڈی ایچ کیو اسپتا لو ں میں صحت کی سہو لیا ت کی فرا ہمی کیلیے ہیلتھ مینو ل کے مطا بق اقداما ت اُٹھا نے کے ساتھ ساتھ مریضو ں کے ہسٹری ریکا رڈ اور حفظا ن صحت کے مطا بق صفا ئی برقرار رکھنے کی بھی ہدایت کی۔ صوبا ئی وزیر نے کا م چو ر، ڈیو ٹی سے غفلت اور عا دی ، غیر حاضرسمیت نکمے اہلکا روں کو کا ر آمد بنا نے یا اُنہیں فا رغ کر نے کیلیے اقداما ت پر زور دیتے ہو ئے کہا کہ اس مقصد کیلیے قواعد و ضوابط میں تبدیلی سے بھی دریغ نہیں کیا جا ئیگا۔ اُنہو ں نے کہا کہ مو جو دہ حکومت عوام کو پرا ئمر ی اور سیکنڈری لیو ل پر صحت کی بہتر سہو لیا ت اُن کی دہلیز پر فرا ہم کر نے کا تہیہ کر چکی ہے اور اس سلسلے میں کسی بھی سمجھو تے کی گنجا ئش نہیں ہو گی۔ اجلاس میں بعض افسروں کی طر ف سے کا رکر دگی میں کمزوری کا نو ٹس لیتے ہو ئے ہدایت کی گئی کہ ہر انتظا می افسر کو اپنی ذمے داریو ں اور قواعد و ضوابط سے بخو بی واقف ہو نا چا ہیے تا کہ ذمے داریاں نبھا نے میں جھجک محسوس نہ ہو۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.