سینیٹ ‘ آر ٹی ایس کی ناکامی پر اظہار تحفظ‘انتخابی ترمیمی بل منظور

49

ا سلام آباد ( آن لائن) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے پارلیمانی امورکے اجلاس میں کمیٹی اراکین نے آر ٹی ایس سسٹم پر کروڑوں روپے اخراجات کے باوجود ناکام ہونے پر اپنے شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کو مزید بااختیار بنانے کی سفارش کی ۔ کمیٹی کا اجلاس چیئرپرسن کمیٹی سینیٹر سسی پلیجو کی سربراہی میں پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا جس میں انتخابات ترمیمی بل 2018ء اور الیکشن کمیشن کی جانب سے آر ٹی ایس کی ناکامی کے سلسلے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ الیکشن کمیشن حکام نے بتایا کہ آر ٹی ایس نادرا نے تیار کیا تھا جس کی تیاری پر 18کروڑ روپے کے اخراجات آئے ہیں، پورے ملک سے حلقوں میں دوبارہ گنتی کے لیے 200کے قریب درخواستیں موصول ہوئی تھیں تاہم فارم 45نہ ملنے سے متعلق ایک بھی درخواست موصول نہیں ہوئی ہے۔کمیٹی کو آر ٹی ایس کی ناکامی سے پید اہونے والی صورتحال پر تفصیلی آگاہ کیا گیا۔ کمیٹی نے کہا کہ آر ٹی ایس کے متعلق قانون میں کوئی شق موجود نہیں۔کمیٹی کو بتایا گیا کہ ضمنی انتخابات میں دہری شہریت والے بھی ووٹ ڈال سکتے ہیں۔کمیٹی نے کہا کہ جو کمزوریاں ہیں انہیں دور کیا جائے اور جو غلطیاں انتخابی عمل میں سامنے آئی ہیں ان کے لیے مناسب اقدامات کیے جائیں۔ کمیٹی کے اجلاس میں انتخابات ترمیمی بل2018 ء کی منظوری بھی دی گئی۔ اجلاس میں سینیٹرز مرزا آفریدی، جاوید عباسی، رحمان ملک، فیصل جاوید، ، یوسف بادینی، ڈاکٹر سکندر میندرو سمیت وزیر انچارج برائے پارلیمانی امور ، الیکشن کے حکام اور دیگر اداروں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.