پولیس نے صوبے بھر سے 176 ملزمان اور 16 مشتبہ افراد کو گرفتارکرلیا

42

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) سندھ پولیس نے مختلف کارروائیوں میں صوبے بھر سے خاتون منشیات فروش سمیت 176ملزمان اور 16 مشتبہ افراد کو گرفتار کرکے انکے قبضے سے اسلحہ اور منشیات برآمد کرلی۔تفصیلات کے مطابق پیر آباد پولیس نے کارروائی کرتے ہو ئے 3 اسٹریٹ کرمنل اکبر شاہ ،انور علی اور سعید زمان کو گرفتار کر کے اسلحہ اور موٹر سائیکل برآمد کرلی ،کورنگی پولیس نے 2 اسٹریٹ کرمنل اظہر اور جنید کو گرفتار کر کے اسلحہ موٹر سائیکل برآمد کرلی ،بوٹ بیس پولیس نے اسٹریٹ کرمنل پرویز کو گرفتار کر کے اسلحہ برآمد کرلیا ،درخشاں پولیس نے مختلف کارروائی میں 2ملزمان جبران اور شیر خان کو گرفتار کر کے اسلحہ اور حقہ برآمد کرلیا ،بریگیڈ پولیس نے آپریشن کرتے ہو ئے ایک ملزم اویس کو گرفتار کر کے اسلحہ برآمد کرلیا جبکہ 16مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا، مدینہ کالونی پولیس نے مفرور ملزم عمر کو گرفتار کر لیا، گبول ٹاؤن پولیس نے مختلف کارروائیوں میں منشیات فروش ہمت حسین اور 2اسٹریٹ کرمنل سلمان حبیب اور انیس کو گرفتار کر کے اسلحہ منشیات اورموٹر سائیکل برآمد کرلی، سہراب گوٹھ پولیس نے منشیات فروش خاتون شکیلہ کو گرفتار کر کے منشیات برآمد کرلی ،ماڑی پور پولیس نے 2 ملزمان عالم اور اللہ بخش کو گرفتار کر کے شراب اور چرس برآمد کرلی ،عزیز آباد پولیس نے منشیات فروش آصف کو گرفتار کرلیا ،چاکیواڑہ پولیس نے 2منشیات فروش نواز اور ساجد کو گرفتار کرلیا ،پریڈی پولیس نے 3 منشیات فروش اسماعیل ،طلحہ اور عبدالباسط کو گرفتار کر لیا۔ ترجمان سندھ پولیس کے مطابق گزشتہ 48 گھنٹوں کے دوران جرائم کیخلاف کی جانے والی چھاپا مار کارروائیوں، پولیس مقابلوں سمیت علاقہ گشت ،پکٹنگ جیسے اقدامات کی بدولت سندھ پولیس نے99مفرور اور 50 اشتہاریوں سمیت مجموعی طور پر155 ملزمان کو گرفتار کر کے 5 پستول بمع راؤنڈزبرآمد کر لیے۔ ترجمان کے مطابق کراچی پولیس نے67 مفرور9 اشتہاریوں سمیت 84 ملزمان کو گرفتار کر کے5پستول بمع راؤنڈزبرآمد کر لیے ہیں۔ حیدرآباد پولیس نے جرائم کیخلاف کی جانیوالی چھاپا مار کارروائی کرکے22مفرور اور13اشتہاریوں سمیت35 ملز مان کوگرفتارکر لیا۔سکھر پولیس نے جرائم کیخلاف کی جانیوالی چھاپا مار کارروائی میں 22 مفرور اور 16 اشتہاریوں سمیت 36ملز مان کو گرفتار کر لیا۔ ترجمان سندھ پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان سے متعلقہ پولیس تفتیش کر رہی ہے اور انکے دیگر ساتھیوں اور گروہوں کیخلاف پولیس کی خصوصی ٹیمز کو ٹاسک دے دیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ