۔70سال سے جاری کھیل ختم نہ ہوا تو ملک کو خطرات لاحق ہوجائیں گے،نوازشریف

196
شیخوپورہ : سابق وزیراعظم نواز شریف جلسے سے خطاب کررہے ہیں
شیخوپورہ : سابق وزیراعظم نواز شریف جلسے سے خطاب کررہے ہیں

شیخو پورہ(خبر ایجنسیاں+مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ (ن) کے صدر اور سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ 70 سال سے جاری کھیل ختم نہ ہوا تو ملک کو خطرات لاحق ہوجائیں گے، پیپلز پارٹی اور لاڈلہ بتائیں کونسا منصوبہ شروع کیا اور کونسا مکمل کیا؟ بجلی کی لوڈشیڈنگ اور دہشت گردی کو ہم نے ختم کیا، چین سے 56 ارب ڈالر ہم لے کر آئے، عام انتخابات میں مخالفین کے ڈبے خالی رہیں گے،
پیپلز پارٹی کا تو ویسے ہی خدا حافظ ہے، اب تحریک انصاف کو بھی خدا حافظ کہنا ہے،کسی سے نہیں ڈرتا، عوام کے ساتھ مل کر 70 سال کی تاریخ کو بدلیں گے، ووٹ کی توہین کی کسی کو جرأت نہیں ہونی چاہیے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے شیخوپورہ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ نواز شریف نے کہا کہ 2018 ء کے عام انتخابات میں امپائروں کی انگلی والوں کے ڈبے خالی رہیں گے، پی پی پی کو تو پہلے ہی خدا حافظ کہہ دیا اب امپائروں کی انگلی والوں کا بھی خدا ہی حافظ ہے۔ انہوں نے کہا ملک کا سب سے چھوٹا نوٹ 10 روپے کا ہے اور اگر کوئی ثابت کر دے کہ میں نے 10 روپے کی بھی رشوت لی ہے تو میں ساری عمر کے لیے ریٹائر ہوجاؤں گا۔سابق وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ عوام نے وزیراعظم نہ ہونے کے باوجود نواز شریف کو اپنے سر پر بٹھا لیا اور نااہل وزیراعظم کا استقبال کیا، میں نااہل نہیں لیکن مجھے نااہل کردیا گیا، پہلی بار 3 سال میں اور دوسری بار 2 سال میں چھٹی ہوگئی، پھر اٹک قلعے میں بند کردیا گیا اور پھر ملک بدر کردیا گیا۔نواز شریف نے کہا کہ مجھے نااہل کرنے والوں سے عوام بدلہ لیں گے۔ انہوں نے کہا پیپلزپارٹی اور لاڈلے کی پارٹی سے کسی ایک منصوبے کا نام پوچھو جو انہوں نے مکمل کیا ہو، پیپلزپارٹی نے ملک کو اندھیروں میں ڈبویا ہم روشنیاں واپس لے آئے، خیبرپختونخوا ٹوٹا پھوٹا ہے، پشاور اور کراچی میں ہر طرف گندگی اور کچرا ہے، نواز شریف نے لوڈشیڈنگ اور دہشت گردی ختم اور ترقیاتی منصوبے شروع کرنے کی وجہ سے فارغ کیا گیا۔نواز شریف کا کہنا تھا کہ 70 سال سے جاری کھیل ختم نہ ہوا تو ملک کو خطرات لاحق ہوجائیں گے، قوم 70 سال سے ہونے والے ظلم و زیادتی کا حساب لے گی، نواز شریف خدا کے سوا کسی سے نہیں ڈرتا اور ہم 70 سال کی تاریخ کو بدلیں گے، ووٹ کا احترام سب کو کرنا پڑے گا، ایسا نہیں چلے گا کہ 20 کروڑ عوام کے منتخب وزیراعظم کو 5لوگ نکال دیں، مجھے نااہل کرنے والوں سے بدلہ لو گے؟۔ جلسے سے نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے بھی خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا نظام عدل ہر اس شخص کا مقروض ہے جس نے ووٹ ڈالا، نواز شریف کے ساتھ ہونے والے مظالم کے قرض کون چکائے گا۔ہر بار عوام کے ووٹ کی پرچی کو روندھا گیا ، اپنے والد اور لیڈر کے لیے جنگ لڑوں گی ۔سابق وزیراعظم کی صاحبزادی نے کہا کہ کیا پاکستان کا اسی طرح تماشہ بنتا رہے گا، کیا اس ناانصافی کے خلاف آپ کچھ کریں گے؟ نواز شریف کو عوام کی محبت اور عشق کی سزا ملتی ہے۔ مریم نواز نے مزید کہا کہ مائنس نواز شریف کے فارمولے پر کام کرنے والوں کو ناکامی ہوئی، نواز شریف کو بدلے میں عوام کی محبت اور عشق ملا اور وہ وقت آرہا ہے جب آئینی اور قانونی جے آئی ٹی بنے گی۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو گالی دینے والے منصف ان کا مقدمہ بھی سن رہے ہیں، آمروں کے سامنے کچھ کرنے کی ہمت نہیں ہوتی ، آئین کی شق 62اور 63کہاں سو جاتی ہے ۔ سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے لیے انجمن تاجران شیخوپورہ کی جانب سے تاج پوشی بھی کی گئی اور 5تولہ سونے کا خصوصی تاج انہیں پیش کیا۔جلسے کا پنڈال 2گراؤنڈز میں بنایا گیا تھا جبکہ شہر کی سڑکوں پر سابق وزیراعظم نواز شریف اور مریم نواز کے خیر مقدمی بینرز بھی آویزاں کیے گئے تھے۔ڈی پی او شیخوپورہ کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے جلسے کی سیکورٹی کے لیے پولیس کے 1800 اہلکار تعینات کیے گئے جن میں 1500 اہلکار جلسہ گاہ اور اطراف جبکہ 300 اہلکار مختلف راستوں پر تعینات کیے گئے تھے۔