نجی سیکٹر فعال ہوگیا ،غیر ملکی سرمایہ کاری بڑھ رہی ہے ،گورنر 

108
ذوالفقار علی بھٹو لایونیورسٹی کی تقریب میں گورنر سندھ محمد زبیر لیپ ٹاپ تقسیم کررہے ہیں
ذوالفقار علی بھٹو لایونیورسٹی کی تقریب میں گورنر سندھ محمد زبیر لیپ ٹاپ تقسیم کررہے ہیں

کراچی ( اسٹاف رپورٹر)حکومت کی معاشی پالیسی کے سب سے زیادہ مثبت اثراتسندھ میں مرتب ہورہے ہیں ، نجی سیکٹرفعال ہونے سے غیر ملکی سرمایہ کاری میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔اعلیٰ تعلیم کافروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ان خیالات کااظہار گورنرسندھ محمدزبیرنے گورنر ہاؤس میں وفاقی وزیر غلام مرتضیٰ خان جتوئی سے ملاقات کے دوران اور ذوالفقارعلی بھٹو لا یونیورسٹی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اطلاعات کے مطابق گورنر سندھ غلام مرتضیٰ خان جتوئی نے گورنر ہاؤس میں ملاقات کی۔ ملاقات میں صوبے میں صنعتی ترقی اور اس کے فروغ ، صنعتی علاقوں میں انفرااسٹرکچر کی بحالی و ترقی کے ضمن میں کیے گئے اقدامات ، سی پیک سے معاشی خوشحالی اور صنعتوں کے قیام سمیت اہمیت کے حامل دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ گورنر سندھ نے کہا کہ صوبے میں حکومت کی معاشی پالیسی کے سب سے زیادہ مثبت اثرات مرتب ہورہے ہیں ، معاشی ، اقتصادی ، تجارتی ، ثقافتی وسماجی سرگرمیوں میں اضافے کے ساتھ ساتھ نئی صنعتوں کے قیام، نجی سیکٹر کی فعالیت سیغیر ملکی سرمایہ کاری میں اضافہ ہو رہا ہے۔ وفاقی وزیر غلام مرتضیٰ خان جتوئی نے کراچی کے صنعتی علاقوں میں کیے گئے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کراچی معاشی شہ رگ ہے جس کی ترقی سے پورے ملک کی ترقی یقینی ہے ، صنعتی و تجارتی علاقوں کے انفرااسٹرکچر کی بحالی و ترقی وقت کی اہم ضرورت ہے، اس ضمن میں وفاقی حکومت ہر ممکن تعاون جاری رکھے گی ۔ علاوہ ازیں ذوالفقار علی بھٹو یونیورسٹی آف لامیں وزیراعظم پاکستان اسکیم کے تحت لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کے لیے تقریب ہوئی۔اس موقع پر گورنرسندھ نے شرکاسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم انسان کو شعور فراہم کرتی ہے اور اسے دوسروں سے ممتاز کرنے کے لیے تحقیق کی جانب راغب کرتی ہے، ہمارے تمام مسائل کا حل بھی اعلیٰ تعلیم کے فروغ میں ہی مضمر ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اعلیٰ تعلیم کا فروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے کیونکہ اعلیٰ تعلیم کے بغیر کو ئی بھی معاشرہ ترقی نہیں کرسکتا۔