آصف زرداری صدمے میں ہیں بیانات کو سنجیدہ نہیں لینا چاہیئے،فواد چوہدری

74

اسلام آباد (خبر ایجنسیاں) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ آصف زرداری کے بیانات کو سنجیدہ نہیں لینا چاہیے‘ وہ ابھی صدمے میں ہیں‘ آصف زرداری کو ہر بات غلط موقع پر یاد آتی ہے تاہم اب وہ کچھ بھی کرلیں‘ مقبول نہیں ہو سکتے‘ شہباز شریف کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا چیئرمین بنانا قوم کیساتھ مذاق ہوگا‘ بینکوں سے ڈیٹا چوری ہونے پر سب سے اچھا جواب پیپلز پارٹی اور ن لیگ میں بیٹھے ماہرین دے سکتے ہیں‘ کسی کے خلاف کریک ڈاؤن نہیں ہو رہا‘بینکوں سے ڈیٹا چوری ہونے پر سب سے اچھا جواب پی پی اور ن لیگ کے ماہرین دے سکتے ہیں‘فراڈ کا تعلق اپوزیشن کے دور اقتدار سے ہے ۔ پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کو نواز شریف دور کے آڈٹ کے لیے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا چیئرمین بنانا قوم کے ساتھ مذاق ہوگا‘پاکستان میں ادائیگیوں کے توازن کا ابتدائی مسئلہ ختم ہوگیا ہے‘ شہباز شریف کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا سربراہ کیسے بنایا جا سکتا ہے وہ نواز شریف کے دور حکومت کے آڈٹ اعتراضات کو تحفظ دے سکتے ہیں‘ کسی کے خلاف کریک ڈاؤن نہیں کیا جا رہا، جن لوگوں نے توڑ پھوڑ کی‘ پراپرٹی کو لوٹا اور گاڑیوں کو نقصان پہنچایا ان کو پکڑا جا رہا ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے ساتھ مستحکم لانگ ٹرم اقدامات کی طرف جا رہے ہیں‘ ملک میں اب استحکام ہے‘ پاکستان میں ادائیگیوں کے توازن کا ابتدائی مسئلہ ختم ہوگیا ہے۔ انہوں نے بینکوں میں فراڈ کے حوالے سے کہا کہ سارے فراڈ کا تعلق موجودہ اپوزیشن کے دور اقتدار سیہے‘ ان سے پوچھنا چاہیے ‘یہ پیسوں کو ٹھکانے لگانے کے لیے خود بینکوں کو استعمال کر رہے تھے، اب ان کے معاملات سامنے آرہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ