اربن ہیلتھ سینٹر اپنا قبلہ درست کرے، پبلک ایڈکمیٹی

26
پبلک ایڈ جماعت اسلامی پی ایس 95 کا وفد سندھ گورنمنٹ ہیلتھ سینٹر کے ایم ایس ڈاکٹر عمران سے ملاقات کررہاہے
پبلک ایڈ جماعت اسلامی پی ایس 95 کا وفد سندھ گورنمنٹ ہیلتھ سینٹر کے ایم ایس ڈاکٹر عمران سے ملاقات کررہاہے

کراچی(اسٹاف رپورٹر)صدر پبلک ایڈ جماعت اسلامی پی ایس 95 عطائے ربی نے علاقہ مکینوں کی شکایت پر اورنگی سندھ گورنمنٹ اربن ہیلتھ سینٹر ، سیکٹر15کے ایم ایس ڈاکٹر عمران سے ملاقات کی۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ محلہ کمیٹی کے صدر فاروق بھائی، سماجی رہنما ماسٹر نورالسلام، صدر جے آئی یوتھ یوسف منیر اورمقامی بزرگ شامل تھے۔ عطائے ربی نے ہیلتھ سینٹرکی تشویش ناک صورتحال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ ہیلتھ سینٹر میں جابجا کچرا کونڈی کا ڈھیر پڑا ہے۔ گائنی، ڈینٹل و دیگر شعبوں میں ڈاکٹرز اور مشینری موجود ہونے کے باوجود سروس موجود نہیں۔ حکومت کی جانب سے مقرر کردہ بچوں کو فری حفاظتی ٹیکوں پر فیس وصول کی جاتی ہے۔ اسپتال کی تیسری منزل پر رہائش
موجود ہے! جہاں پانی، بجلی، گیس کی سہولیات موجود ہونے کے باوجود مریضوں کے لیے مریضوں کے لیے یہ سہولیات دستیاب نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اورنگی کے ووٹ سے قومی،صوبائی و بلدیاتی اختیارات کے مزے لوٹنے والے عوامی مسائل سے بے فکر کیوں ہیں؟اسپتال ایم ایس ڈاکٹر عمران نے بتایا کہ پانی، بجلی، گیس کی سہولت موجود نہیں ہونے کی وجہ سے ایکسرے، گائنی اور ڈینٹل کے شعبے بند ہیں۔ حکومت سندھ کی جانب سے دواؤں کی عدم فراہمی کے باعث اسپتال کاعملہ اپنی جیب سے دواؤں کا انتظام کرنے پر مجبور ہے۔ گندگی و غلاظت کی صفائی کے لیے بلدیہ سے رابطہ کیا جاتا ہے مگر عملہ میسر نہیں ہوتا۔ محلہ کمیٹی کے صدر فاروق بھائی نے کہا کہ اورنگی کے غریب عوام کے لیے اربن ہیلتھ سینٹر کسی نعمت سے کم نہیں، متعلقہ حکام فوری ایکشن لے کر ہیلتھ سینٹرکی سروسزبحال کروائیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ