آواران اور ژوب میں خسرے کی وباء پھیل گئی ، 9 بچے جاں بحق

196

آواران اور ژوب میں خسرہ وبائی صورت اختیار کر گیا. آواران میں ایک ہی گھر کے 5 بچے خسرے سے جاں بحق ہو گئے۔ ژوب میں بھی 4 بچے نشانہ بن گئے۔ وزیراعلی بلوچستان نے محکمہ صحت سے رپورٹ طلب کر لی۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق آواران اور ژوب میں خسرے نے پنجے گاڑھ لئے۔ وبائی بیماری نے بچوں کو نگلنا شروع کر دیا۔ خسرے سے سب زیادہ جانی نقصان آوران میں ہوا جہاں پانچ بچے اسپتال پہنچ کر دم توڑ گئے۔ شہر میں مریضوں کی تعداد میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے اور سہولتیں نہ ہونے کے برابر ہیں۔

ژوب کی صورتحال بھی انتہائی خراب ہے جہاں 4 بچے خسرہ کا شکار ہو کر زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ ڈسٹرکٹ اسپتال میں 40 سے زائد بچے زیر علاج ہیں جنہیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ اسپتالوں میں مناسب انتظامات نہ ہونے کی وجہ سے صورتحال مزید خراب ہونے کا خدشہ ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ