سیلاب متاثرین کی مدد فلاحی کام ، سندھ کا عدم تعاون ناقابل فہم ہے، پرویز الٰہی

126

لاہور:وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ سیلاب متاثرین کی مدد فلاحی کام ہے، سندھ کاعدم تعاون ناقابل فہم ہے۔ان خیالات کا اظہاروزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویزالٰہی سے پنجاب احساس پروگرام کی سربراہ ڈاکٹر ثانیہ نشتر سے ملاقات میں کیا۔

ملاقات کے دوران ڈاکٹرثانیہ نشتر نے مستحق خاندانوں کیلئے مالی معاونت کے احساس راشن پروگرام پر بریفنگ دی۔ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے سیلاب متاثرین کی بحالی و آباد کاری کے پروگرام پر پیش رفت سے بھی آگاہ کیا۔ 

وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے مستحق افراد کی مدد کیلئے ڈاکٹر ثانیہ نشترکی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ پنجاب احساس پروگرام کے ذریعے سیلاب زدگان کی بحالی کے لئے مثالی کام کیاہے۔ سیلاب متاثرین کا ڈیٹا حاصل کرنے کیلئے ٹیکنالوجی کی مدد لی گئی ہے۔ 

چوہدری پرویز الٰہی نے کہا کہ احساس پروگرام کے ذریعے سیلاب متاثرین کی مدد آئندہ بھی جاری رہنی چاہیے۔ احساس پروگرام کی افادیت کے پیش نظر اسے کسی دور میں بند نہیں کیا گیا۔ امید ہے احساس پروگرام اور سیلاب متاثرین کی بحالی جاری رہے گی۔

 انہوں نے کہا کہ سیلاب متاثرین کی مدد ثواب کا کام ہے۔ فنڈز کی شفافیت سے استعمال کی ماضی میں کوئی مثال نہیں،پنجاب حکومت نے سندھ کے سیلاب متاثرین کیلئے ایک ارب روپے کے فنڈز رکھے۔ مستند ڈیٹا ملنے پر ایک ارب روپے سندھ حکومت کو دیئے جائیں گے۔ سندھ حکومت نے سیلاب متاثرین کا ڈیٹا نہیں دیا۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کی طرف سے باضابطہ طور پر ایک ارب روپے کی فراہمی کے لئے خط کا جواب بھی سندھ نے نہیں دیا،سندھ کے سیلاب متاثرین کے لئے عمران خان کی ہدایت کے مطابق ایک ارب روپے دینا چاہتے ہیں۔ سیلاب متاثرین کی مددفلاحی کام ہے، سندھ کا عدم تعاون ناقابل فہم ہے۔

چوہدری پرویزالٰہی نے کہا کہ حکومت پنجاب اور متعلقہ ادارے ہر طرح سے سندھ حکومت سے رابطہ کر چکے ہیں۔ پنجاب سندھ کے متاثرہ بھائیوں کیلئے اپنی کمٹمنٹ پوری کرے گا۔ وفاقی حکومت نے پنجاب کو سیلاب متاثرین کے لئے کوئی پائی پیسہ نہیں دیا۔