قبضے کی جگہ تعمیر: بہادرآباد تھانے کو منتقلی کیلئے 30 دن کی مہلت

179
سندھ ہائیکورٹ کی قبضے کی جگہ تعمیر بہادرآباد تھانے کو منتقلی کیلئے 30 دن کی مہلت

 کراچی: سندھ ہائیکورٹ نے نجی اراضی پر بہادر آباد تھانے کی غیر قانونی تعمیرات کیخلاف درخواست پر تھانہ منتقلی سے متعلق اقدامات کیلئے 30 دن کی مہلت دے دی۔

جسٹس ندیم اختر کی سربراہی میں دو رکنی بینچ کے روبرو نجی اراضی پر بہادر آباد تھانے کی غیر قانونی تعمیرات کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالتی حکم کے باوجود تھانہ دوسری جگہ منتقل نہ کرنے پر عدالت برہم ہوگئی۔

جسٹس ندیم اختر نے ریمارکس دیئے کہ بار بار ایک ہی مقصد کیلئے کیس لگنا عدالتی وقت کا ضیاع ہے۔ عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ حکم دے چکے ہیں عمل درآمد کریں ورنہ چیف سیکریٹری کو طلب کریں گے۔

ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل نے موقف دیا کہ تھانہ منتقلی کے حوالے سے کمیٹی کی میٹنگ ہوچکی ہے۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کمیٹی اتنے سالوں سے مسئلہ حل نہیں کر پارہی، نااہل لوگوں کو کمیٹی میں شامل کریں گے تو یہی حال ہوگا۔

سرکاری وکیل نے موقف دیا کہ تھانے والی زمین درخواستگزار کی نہیں ہے۔ جسٹس ندیم اختر نے ریمارکس دیئے کہ درخواستگزار کی ملکیت ہو نا ہو، یہ سرکاری اراضی نہیں ہے، تھانہ تو منتقل کرنا ہوگا۔

عدالت نے تھانہ منتقلی سے متعلق اقدامات کیلئے 30 دن کی مہلت دے دی۔ دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا تھا کہ میری 300 مربع گز لیز زمین پر قبضہ کرکے تھانہ قائم کردیا گیا ہے۔ تھانے مسمار کر کے زمین و اگزار کرائی جائے۔