چہروں کو بگاڑ کر مختلف وڈیوز شامل کی گئیں، اعظم سواتی کی وڈیو جعلی قرار

142

اسلام آباد : وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے)نے سینیٹر اعظم سواتی کی وڈیو جعلی قرار دے دی۔

اس سلسلے میں جاری اعلامیے کے مطابق انٹرنیٹ پر پھیلائی جانے والی سینیٹر اعظم سواتی کے بارے میں وڈیو جعلی ہے۔ اعظم سواتی سے منسوب وڈیو اور آڈیو کا تفصیلی تجزیہ کیاگیا۔وڈیو اور آڈیو کا فریم ٹو فریم فارنزک تجزیہ کیا گیا ہے اور یہ فارنزک انٹرنیشنل معیار کے مطابق کی گئی۔

ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ انٹرنیشنل معیار کے فارنزک سے ثابت ہوا ہے وڈیو میں ایڈیٹنگ ہوئی ہے۔ چہروں کو بگاڑ کر مختلف وڈیوز اس میں شامل کی گئیں اور فوٹوشاپ کی گئی۔ایف آئی اے نے بتایا کہ اعظم سواتی نے جو باتیں کی ہیں، اس پر باضابطہ تحقیقات کی ضرورت ہے۔اعظم سواتی تحریری درخواست دیں اور اپنے تمام تحفظات دیں۔ایف آئی اے کا کہنا تھاکہ بظاہرجعلی وڈیو سینیٹر اعظم سواتی کو بدنام کرنے کے لیے پھیلائی گئی۔

واضح رہے کہ اعظم سواتی نے پریس کانفرنس کی تھی اور کہا تھاکہ میری اور میری اہلیہ کی وڈیو میری اہلیہ کوبغیرکسی نمبر کے فون سے بھجوائی گئی۔رہنما پی ٹی آئی اعظم سواتی یہ بتاتے ہوئے پھوٹ پھوٹ کر رو پڑے۔انہوں نے کہا کہ یہ وڈیو کوئٹہ سپریم کورٹ جوڈیشل لاجز میں ان کے قیام کی ہے۔ وڈیو سامنے آنے کے بعد میری اہلیہ، بیٹی اور پوتیاں ملک چھوڑ کر چلے گئے ہیں۔