آئی ایم ایف سے معاہدہ مناسب، حکومت مہنگائی کم کرے، صدر کا پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب

213

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ مناسب ہے لیکن حکومت کو مہنگائی کم کرے کے لیے کوششیں کرنا ہوں گی۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ پاکستان میں مستقل سرمایہ کاری اور معاشی ترقی کے لیے سیاسی استحکام بہت ضروری ہے۔جیسے جیسے سولر انرجی کی طرف جائیں گے تو امید ہے چند برسوں میں یوٹیلٹی بھی کم ہو جائے گی۔

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف کے ساتھ پاکستان کا معاہدہ مناسب ہے۔  ہمیں مستقبل میں سیلاب کے نقصانات کم کرنے کے لیے پاکستان میں ڈیمز بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج نے قدرتی آفت کے دوران سیلاب زدہ افراد کی بے مثال مدد کی ہے، جس پر افواج پاکستان کا کردار قابل تعریف و تحسین ہے۔ سیلاب سے ملکی فصلوں کو شدید نقصان پہنچا ہے جب کہ جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد تقریباً 1500 سے زائد ہو چکی ہے۔ صدر نے کہا کہ حکومت ملک میں فصلوں کی انشورنس متعارف کروائے۔

مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت نے مزید کہا کہ سائبر پاور ٹیکنالوجی میں چھوٹے چھوٹے ممالک پاکستان سے آگے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کی جنگیں اب سائبر ورلڈ میں ہوں گی۔ ہمیں مستقبل کے لیے تیاری کرنی ہوگی۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ملک میں آن لائن ایجوکیشن کے فروغ کے لیے کام کیا جانا چاہیے۔ 2 کروڑ بچے اسکولوں سے باہر ہیں، تعلیم کے فروغ کے لیے مساجد کا کردار اہم بنایا جا سکتا ہے۔  گلوبل وارمنگ کے اثرات پاکستان پر پڑ رہے ہیں، گلوبل وارمنگ میں پاکستان کا ایک فیصد بھی حصہ نہیں ہے۔دنیا کو پاکستان کے سیلاب سے متعلق احساس ہے، این ڈی ایم اے، پاکستان ریڈ کراس، بوائر اینڈ گرلز اسکاؤٹس کو تیار ہونا چاہیے۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ میڈیا کی آزادی جمہوریت کی آزادی کے لیے بہت ضروری ہے۔ سوشل میڈیا بند کرنے سے مالی نقصان ہوتا ہے، فیک نیوز سے دنیا پریشان ہے۔