کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج، پتھراؤ سے پولیس اہلکار زخمی

144

کراچی کے علاقے شاہ لطیف ٹاون میں بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ بندش کے خلاف علاقہ مکین مشتعل ہو کر سڑکوں پر نکل آئے اور ٹریفک کی روانی معطل کرا دی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے شاہ لطیف ٹان میں بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ سے پریشان عوام سڑکوں پر نکل آئی، مظاہرین نے سڑک پر ٹریفک کی روانی معطل کرکے کے الیکٹرک اور حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی شروع کی۔

سڑک بلاک کیے جانے اور احتجاج کی اطلاع ملنے پر شاہ لطیف پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچی اور مظاہرین کو منشتر کرنے کے لیے ڈنڈے مارنے شروع کیے تو مظاہرین پولیس کے رویے پر مزید مشتعل ہوگئے اور پتھراو شروع کر دیا۔

پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ہوائی فائرنگ بھی کی، تاہم علاقہ مکینوں کی جانب سے پتھرا جاری رہا جس کی زد میں آکر دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے، زخمیوں کو طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا۔

پولیس کے مطابق مظاہرین احتجاج ختم کرکے گھروں کی جانب لوٹ گئے ہیں اور ٹریفک کی روانی بھی بحال ہوگئی ہے۔

ترجمان کراچی پولیس کے مطابق زخمیوں میں شاہ لطیف تھانے کا اے ایس آئی 40 سالہ منور حسین اور کانسٹیبل 30 سالہ اقرار شامل ہیں ، پولیس نے پتھراو کرنے کے الزام میں دو مظاہرین کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کر دیا ۔