وزیر جامعات کا امتحانات میں کے الیکٹرک سے لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کا مطالبہ

230

کراچی: وزیر جامعات و بورڈز اسماعیل راہو کا کہنا ہے کہ محکمہ بورڈز امتحانی مراکز کے انچارج کو طلبہ کو ٹھنڈہ پانی کلاس روم تک مہیہ کرنے کیلیے سہولیا ت فراہم کریگا، کاپی کلچر روکنے کے لیے امتحانی مراکزکےاندر اور باہر سیکیورٹی سخت کی جائے گی۔

وزیر جامعات و بورڈز  کی صدارت میں نویں اور دسویں جماعت کے امتحانات کے متعلق اہم اجلاس ہوا، جس میں سیکریٹری بورڈز مرید راھموں، کراچی، میرپور خاص، لاڑکانہ، نوابشاہ، سکھر اور حیدرآباد کے چیئرمینز بورڈز نے شرکت کی۔

اسماعیل راہو کا کہنا تھا کہ اجلاس میں کاپی کلچر کی روک تھام، ہیٹ ویو اور سیکیورٹی انتظامات کے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا، کراچی سمیت سندھ بھر کے تمام امتحانی مراکز میں طلبہ اور اساتذہ کے موبائل فونز لانے پرپابندی ہوگی۔

اسماعیل راہو نے کہا کہ موبائل فونزساتھ لانے والے طلبہ کوامتحانی مراکز سے باہر نکالا جائےگا،  کراچی سمیت سندھ بھر میں کل نویں اوردسویں جماعت کے 7 لاکھ 26 ہزار 979 طلبہ امتحان دیں گے۔

 اسماعیل راہو نے کہا کہ کراچی, حیدرآباد, سکھر, لاڑکانہ, میرپورخاص اور نوابشاہ ڈویزنز میں 1312 امتحانی مراکز قائم اور 112 ویجیلنسی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔ وزیر بورڈز نے وفاقی حکومت سے نویں اور دسویں جماعت کے امتحانات کے دوران  لوڈشیڈنگ نہ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں گرمی کی شدت بڑھنے کی وجہ سے طلبہ کو امتحان دینے میں مشکلات کا سامنہ ہوگا جس کی وجہ سےلوڈشیڈنگ نہ کی جائے۔

سماعیل راہو کا مزید کہنا تھا کہ کےالیکٹرک کراچی میں امتحانی مراکز کےعلاقوں میں لوڈشیڈنگ نہ کرے۔اسماعیل راہو نے کراچی سمیت سندھ بھر کے امتحانی مراکز کے انچارجز کو ہدایت کی کے طلبہ کے امتحان کے دوران جنریٹر اسٹینڈ بائے رکھے جائیں، امتحانات کے دوران امتحانی مراکز کے اطراف دفعہ 144 نافذ کردی گئی ہے۔