ایس ایم ایز مالکان کیلیے کاروباری ڈیجیٹل تعلیمی منصوبہ

149

کراچی (اسٹاف رپورٹر) کورونا کی حالیہ وباء کے نتیجے میں متحدہ عرب امارات میں شہری منظر نامے اور دیہی کسانو ں سے لے کر فیشن اسٹور، سروس پرووائیڈرز اور ان گنت دیگر کاروباری شعبہ جات سمیت چھوٹے کاروباری شعبہ کو منفرد تبدیلیوں کا سامنا کرنا پڑا،اور اس میں تیزی سے بڑھتی ہوئی ڈیجیٹل تبدیلیوں اور ای کامرس نے جلتی پر تیل کا کام کیا۔ماسٹر کارڈ نے اس صورتحال میں چھوٹے اور درمیانے درجہ کے کاروبار کی مدد کیلئے‘The Entrepreneur’s Odyssey’متعارف کرایا،جو اپنی نوعیت کاپہلا ڈیجیٹل تعلیمی پلیٹ فارم ہے جو چھوٹے اور درمیانے کاروباری اداروں کو سیکھنے اور پھلنے پھولنے میں مدد کی غرض سے عالمی معیار کی تعلیمی اور کاروباری وسائل فراہم کرتا ہے۔گزشتہ برس دنیا کے لاک ڈاؤن میں جانے کے فوری بعد ماسٹر کارڈ نے اس وباء کے دوران ایس ایم ایز کی ڈیجیٹل و تربیتی سپورٹ کی مد میں پانچ سالہ حکمت عملی کے تحت 250ملین ڈالرز کا اعلان کیا،اب ماسٹر کارڈ‘The Entrepreneur’s Odyssey اقدام کے ذریعے چھوٹے کاروباروں کو زیادہ موثر اور محفوظ طریقے سے چلانے کیلئے ڈیٹا سے متعلق بصیرت اور آگاہی کے ساتھ مزید با اختیار بنائیگا۔ماسٹر کارڈ اکیڈمی پر طریقہ کار دیکھنے کیلئے‘The Entrepreneur’s Odyssey’ریکارڈشدہ وڈیو کے ساتھ براہ راست منسلک ہے،جو شرکاء کو ماسٹر کارڈ کی ماہر فیکلٹی کے ساتھ ساتھ ہاورڈ،INSEAD, Whartonاور Christiansenانسٹی ٹیوٹ آف انوویشن کے پروفیسرز کے ساتھ آمنے سامنے آنا کا موقع فراہم کرے گی۔ماسٹر کارڈ کے وائس چیئرمین و پریذیڈنٹ اسٹریٹجک گروتھ Michael Froman,کا کہنا ہے کہ ’’کاوربار مقامی کمیونٹیز کی ریڑھ کی ہڈی اور عالمی معیشت کیلئے ایک انجن ہیں،تاہم اس کی وجہ سے یہ کبھی اہم نہیں رہا کہ چھوٹے کاروباری افراد اور مالکان کی اس وبائی صورتحال سے مقابلہ کیلئے تعلیمی وسائل، معلومات، ٹولز اور سالوشنز تک رسائی یقینی بنائی جائے۔