مسئلہ فلسطین کو قصہ پارینہ نہیں بننے دیا جائے گا، لیاقت بلوچ

249

لاہور:نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ کا کہنا ہے کہ اسرائیل ناجائزریاست ہے، مسئلہ فلسطین و مسئلہ کشمیر کو سرد خانوں میں ڈالنے اور قصہ پارینہ نہیں بننے دیا جائے گا۔

یوم القدس سمینار سے صدارتی خطاب کرتے ہوئےلیاقت بلوچ نے کہا کہ اسلام کی عالمی تحریک سرزمین فلسطین کی آزادی اور اسرائیل کی مکمل نابودی سے کم کسی شے پر راضی نہیں ہوگی ۔ قبلہ اول کی بازیابی پوری ملت اسلامیہ کی گردنوں پر قرض اور فرض ہے ۔

نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان کا کہنا تھا کہ مظلوم کی فریاد سننا، اس کی ہر قیمت پر مدد کرنا مسلمانوں پر فرض ہے ، فلسطین کی مکمل آزادی فلسطینیوں کا حق ہے ۔

لیاقت بلوچ نے مزید کہاکہ  فلسطین، کشمیر، افغانستان کے مسائل اتحاد امت سے حل ہوں گے، اغیار نے مسلمانوں پر اپنا ایجنڈا استعمال کیا اور نفاذ کے لیے بزدل مسلم حکمران آلہ کار بن گئے۔

لیاقت بلوچ کا مزید کہنا تھاکہ پاکستان عالم اسلام کا اہم ترین اور لیڈر ملک ہے لیکن حکمرانوں نے بزدلی ، کرپشن ، بے تدبیری اور عدم حکمت سے خود پاکستان کو بحرانوں سے دوچار کردیاہے، اقتصادی محاذ پر قرضوں و کشکول کی حکمت عملی ترک کی جائے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ خود انحصاری ، خود داری اور اپنے عوام پر اعتماد کے ساتھ پاکستان کا مقام بحال کیا جائے، فلسطین و کشمیر اور افغانستان پر قومی حکمت عملی بنائی جائے جس پر قومی قیادت اور عوام متحد ہو جائیں، مسئلہ کشمیر کے حل کی جدوجہد ترک کرنا اور بیرونی دباﺅ پر اسرائیل کی ناجائز ریاست کو تسلیم کرنا ملت اسلامیہ اور قائد اعظم ؒ ، علامہ اقبال ؒ کی فکر سے غداری ہوگی ۔