رواں سال کے ابتدائی 9 ماہ میں بیرونی سرمایہ کاری 52 فیصد کم ہوئی،اسٹیٹ بینک

117

کراچی (اسٹاف رپورٹر) رواں مالی سال کے ابتدائی 9 ماہ میں بیرونی سرمایہ کاری 52 فیصد کم ہوئی۔اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے رواں مالی سال کے ابتدائی 9 ماہ میںبیرونی سرمایہ کاری سے متعلق جاری کردہ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کے ابتدائی 9ماہ میں بیرونی سرمایہ کاری 52فیصد کم ہوئی، اس دوران سرمایہ کاری کا حجم ایک ارب 12 کروڑ ڈالر رہا۔اسٹیٹ بینک کے مطابق جولائی سے مارچ کے دوران نجی شعبے میں ایک اعشاریہ 12 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی جبکہ اسی دورانیے میں سرکاری شعبے میں 35لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی۔اعداد و شمار کے مطابق 9 ماہ میں براہ راست سرمایہ کاری ایک ارب 39کروڑ ڈالر رہی جبکہ اس دوران اسٹاک مارکیٹ سے 26 کروڑ ڈالر کا انخلا ہوا۔ مرکزی بینک کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے 9ماہ کے دوران براہ راست بیرونی سرمایہ کی شرح میں 35 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق رواں سال مارچ میں 28 کروڑ 74 لاکھ ڈالر کی بیرونی سرمایہ کاری ہوئی، نجی شعبے میں 15اعشاریہ 87 کروڑ کی سرمایہ کاری ہوئی۔اعداد و شمار کے مطابق مارچ میں سرکاری شعبے میں 12اعشاریہ 86کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی۔اسٹیٹ بینک کے مطابق مارچ میں 16 اعشاریہ 76کروڑ ڈالر کی براہ راست سرمایہ کاری ہوئی۔