وزیراعظم صرف یوٹرن لینے کو ہی کام سمجھتے ہیں: سراج الحق

177

امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے خوراک کی کمی نہ ہونے کا اعلان کیا تھا لیکن خوراک ختم ہوچکی۔ مافیا کو صرف مافیا کہنے سے کام نہیں چلے گا۔

فیصل آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے کہا کہ وزیراعظم نے مافیاز کے اثر ورسوخ اور جہاز کو استعمال کیا۔ مافیاز وزیراعظم کے ساتھ بیٹھے ہیں، کیسے کارروائی کرسکتے ہیں۔

سراج الحق نے کہا کہ وزیراعظم نے 4 وزیروں کو تبدیل کر کے قوم کو نقصان پہنچایا۔ حکومتی ٹبر میں ایک ایسا نہیں جو مسائل حل کرنے کی صلاحیت رکھتا ہو، وزیراعظم صرف یوٹرن لینے کو ہی کام سکتے ہیں۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ کورونا وائرس خطرناک وبا ہے۔ شریعت نے ہمیں احتیاطی تدابیر کی تلقین کی ہے۔ دنیا میں لوگوں نے کورونا سے متاثر ہونے والے کاروبار اور افراد کی مدد کی۔ کاش ہماری حکومت بھی دیگر حکومتوں کی طرح اقدامات کرتی۔

سراج الحق نے کہا کہ حکومت خود کہتی ہے اسپتالوں میں بیڈز اور وینٹی لیٹر نہیں، تو پھر ایک سال میں کیا کیا؟ کیا حکومت نے اسپتالوں میں بیڈز، وینٹی لیٹرز اور ڈاکٹروں کا انتظام کیا؟ کورونا کے باعث بہت سے فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز جاں بحق ہوگئے۔

انہوں نے کہا کہ جرمن چانسلر نے 3 ہفتوں تک ویکسین کا انتظار کیا۔ ہمارے حکمرانوں نے سب سے پہلے خود ویکسین لگوائی۔ ایک وزیر نے تو اپنے خاندان کے لیے ویکسین لی اور فائدہ اٹھایا۔

سراج الحق نے مزید کہا کہ پوری دنیا میں ویکسین مفت ملتی ہے اور یہاں اسپتالوں سے غائب ہوجاتی ہے۔