حکومت آئی ایم ایف کا مطالبہ مسترد کردے، کاشف شیخ

71

کراچی(اسٹاف رپورٹر )جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکرٹری کاشف سعید شیخ نے کہا ہے کہ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کی جانب سے ایک بار پھر بجلی و گیس کی قیمتیں بڑھانے کے مطالبے کو ملک کی آزادی و خود مختاری کے تقاضوں کے منافی اور غریب لوگوں کے منہ سے روٹی کا نوالہ چھیننے کے مترادف قرار دیا ہے۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ لاک ڈاؤن اوربے روزگاری کی وجہ سے ملک کی معاشی صورتحال ابتر اور عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں۔ عالمی مالیاتی ادارے کی جانب سے بجلی و گیس کی قیمتوں میں اضافے کا مطالبہ سراسر ظلم ہے۔ کیونکہ بجلی وگیس قیمتوں میں اضافے سے روٹی ،ٹرانسپورٹ سمیت روزمرہ کی اشیائے خور ونوش کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافہ ہوگا۔پی ٹی آئی حکومت کے2 برس کے دوران بنیادی اشیائے خوراک کی قیمتوں میں 50تا100 فیصد اضافہ ہوچکا ہے۔تبدیلی و معاشی خوشحالی کے دعویدار حکمرانوں کو یہ معلوم ہونا چاہیے کہ کمر توڑ مہنگائی میں عوام کی قوت خرید ختم ہو کر رہ گئی ہے۔ اگر عالمی ادارے کی فرمائش پر بجلی و گیس کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا تو اقتصادی انتشار اور بے یقینی کی صورتحال جنم لے سکتی ہے۔ وزارت عظمیٰ سے قبل عمران خان نے احتجاجی دھرنوں کے دوران بجلی کے بھاری بلوں کو جلایا تھا۔انہوں نے کہا کہ خراب معاشی صورتحال نے حکومتی ٹیم کے تمام دعوئوں کو کھوکھلا ثابت کردیا ہے۔ ملک کی تعمیر و ترقی کے لیے ضروری ہے کہ کرپٹ نظام و قیادت سے نجات حاصل کی جائے۔ صوبائی رہنما نے کہا کہ حکومت سودی نظام سمیت آئی ایم ایف کی معاشی غلامی سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لیے ٹھوس اقدامات کر کے ملک کو مستحکم اور عوام کو روزگار، مہنگائی و غیروں کی غلامی سے نجات دلائے۔ گیس و بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کرنے کا عالمی مالیاتی ادارے کا مطالبہ مسترد کردیں۔