سوشل میڈیا پر ترک اور پاکستانی ڈراموں کے درمیان بحث جاری

155

اداکارہ سونیا حسین نے حال ہی میں ترکی کے ٹیلی ویژن سیریز کو دی جانے والی اہمیت پر لازوال بحث سے تنگ آکرو خطاب کرتے ہوئے ایک انسٹاگرام پوسٹ اپ لوڈ کی ہے کہ مہربانی کرکے ترک فنکاروں کی جان بخش دیں۔

سوشل میڈیا پر چلنے والی بحث کی تفصیلات کے مطابق جب سے ترکی کا مشہور ڈراما ’’ارطغرل غازی‘‘ پاکستان میں نشرہوا ہے، پاکستانی عوام اور کچھ فنکار دو حصوں میں تقسیم ہوگئے ہیں، جہاں تقریباً تمام پاکستانی ’’ارطغرل غازی‘‘ کو پاکستانی ٹی وی پر نشر کرنے سے بے حد خوش ہیں، وہیں یاسر حسین، ژالے سرحدی، شان شاہد اور ہدایت کارسید نوراس ڈرامے کو پی ٹی وی پر دکھائے جانے کے سخت مخالف ہیں۔

پچھلے کچھ مہینوں سے پاکستانی سوشل میڈیا پرارطغرل کے حامیوں اورمخالفین کے درمیان ایک جنگ سی چل رہی ہے جس میں یاسر حسین پیش پیش ہیں اورکھل کر ترک ڈرامے کی مخالفت کررہے ہیں، جبکہ حال ہی میں وی جے انوشے اشرف اوریاسر حسین کے درمیان اسی موضوع کو لے کراچھی خاصی بحث ہوچکی ہے۔

اداکار سونیا حسین سوشل میڈیا پرجاری بحث سے تنگ آچکی ہیں اورانہوں نے انسٹاگرام سٹوری میں اس بحث سے متعلق لکھا کہ مہربانی کرکے جان بخش دیں ترک اداکاروں اور اپنے اداکاروں کی بھی، تعریف کرنا سیکھیں نیچا دکھانا نہیں، نرمی اختیارکریں اور محبت سے بات کریں۔

سونیا حسین نے ایک ایموجی بھی اپنی پوسٹ میں استعمال کیا جس میں دونوں ہاتھ آپس میں جڑے ہوئے ہیں۔

واضح رہے ترک ڈرامہ ارطغل غازی 13 ویں صدی اناطولیہ میں مبنی ہے اور سلطنت عثمانیہ کے قیام سے قبل کی کہانی سناتا ہے، اس میں سلطنت کے بانی عثمان کے والدارطغل غازی کی جدوجہد کی مثال دی گئی ہے۔