کراچی میں ایڈمنسٹریٹر کی تعیناتی کے لیے تین ناموں پر غور شروع

378

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پیپلز پارٹی کی قیادت نے بلدیہ عظمی کراچی میں ایڈمنسٹریٹر کی تعیناتی کے لئے سول سوسائٹی سے تعلق رکھنے والی اچھی شہرت کی حامل تین شخصیات کے ناموں پر غور شروع کر دیا ہے۔

سندھ میں بلدیاتی نمائندوں کی مدت 28 اگست کو ختم ہو گی، جس کے لئے پیپلز پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری کی زیر صدارت اجلاس میں فیصلہ کیا گیا تھا کہ سرکاری افسر کے علاوہ سول سوسائٹی سے تعلق رکھنے والے افراد کو بھی بلدیہ عظمی کراچی کے ایڈمنسٹریٹر کے لئے چناؤ میں شامل کیا جانا چاہیے۔

ذرائع کے مطابق سول سوسائٹی سے معروف آرکیٹیکٹ ڈاکٹر نعمان احمد، سابق سینیٹر تاج حیدر اور ماہر معیشت اسد سعید کے نام ایڈمنسٹریٹر کے لئے زیر غور ہے۔

ذرائع کے مطابق سندھ حکومت پارٹی قیادت کی مشاورت سے نام فائنل کرے گی، تاہم زیادہ امکان ہے کہ سندھ کے شہری علاقوں سے تعلق رکھنے والے کسی بیوروکریٹ کو کراچی کا ایڈمنسٹریٹر بنایا جا سکتا ہے۔

اگست کے آخر میں کراچی کے بلدیاتی نظام کی مدت پوری ہو جائےگی جس کے بعد بلدیاتی امور چلانے کے لیے ایڈمنسٹریٹر لگائے جائیں گے۔

اس حوالے سے ایم کیوایم سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزیر امین الحق کا کہنا ہے کہ کراچی ایڈمنسٹریٹر کیلئےسندھ حکومت کو کوئی نام نہیں دیا جب کہ تحریک انصاف کے خرم شیر زمان کا کہنا ہے کہ اتفاق رائےسےایڈمنسٹریٹر کی تعیناتی کا فیصلہ کرناچاہیے۔