پنجاب نے تعلیمی سرگرمیوں کے ایس او پیز مرتب کرلیے

240

لاہور: پنجاب حکومت نے کورونا وائرس کیسز میں کمی کے بعد 15 ستمبر سے اسکولوں میں تعلیمی سرگرمیوں کے آغاز کے حوالے سے ایس او پز مرتب کرلیے۔

محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر نے ایس او پیز کا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے جس میں کہاگیا ہے کہ اِن ڈور گیمز، جھولے، سلائیڈز اور کھیلوں کی سرگرمیوں پرمکمل پابندی ہوگی جبکہ سیمینار، تقریری مقابلے، کھیلوں کے مقابلے اور ٹورنامٹ منعقد کروانے پر بھی پابندی برقرار رہے گی۔

میڈیا رپورٹس سے حاصل ہونے والی اطلاعات کے مطابق تعلیمی اداروں میں ماسک پہنا لازمی قرار دیا گیا ہے جبکہ مارننگ اسمبلی منعقد کروانے پربھی پابندی نافذ ہوگی ۔

تعلیمی اداروں کی بسوں میں کل گنجائش کا 50 فیصد جبکہ ہاسٹلز کی سہولت کیلئے  30 فیصد گنجائش کو ہی استعمال کیا جائے گا، طالبعلموں اور اسٹاف کو ہاتھ دھونے کا پابند کیا جائے گا جبکہ تمام تعلیمی ادارے صابن اور ہینڈ سینٹائزر کی دستیابی کو یقینی بنائیں گے۔

رپورٹ کے مطابق سانس کی تکلیف میں مبتلا طالبعلم اور اسٹاف کو گھروں تک ہی محدود رکھیں۔ تعلیمی سرگرمیاں شروع کرنے کے 3 دن قبل اداروں کی جامع صفائی اور ڈس انفکیٹ کیا جائے جبکہ روزانہ کی بنیاد پر بھی یہ عمل دہرایا جائے۔

پنجاب کے تعلیمی اداروں میں 6 فٹ کا سماجی فاصلہ لازمی رکھا جائے گا، طالب علموں کی ساتھیوں سے ہاتھ ملانے پر پابندی ہوگی۔

اسکولوں میں اساتذہ تعلیمی اداروں میں لیکچر دیتے وقت سماجی فاصلہ اپنائیں گے،تعلیمی اداروں میں طالبعلموں اپنا دوپہر کا کھانا گھر سے لانے کی ہدایت کی گئی ہے۔