اسرائیلی پولیس اور آبادکاروں کے فلسطینیوں پر حملے

99

مقبوضہ بیت المقدس (انٹرنیشنل ڈیسک) اسرائیلی آبادکاروں کے ایک گروہ نے مغربی کنارے کے جنوبی شہر نابلس میں فلسطینیوں کے گاؤں مادمہ پر حملہ کردیا۔ عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ غیر قانونی صہیونی بستی یتسہار سے تعلق رکھنے والے صہیونی آبادکاروں کے گروہ نے گاؤں کے جنوبی حصے پر دھاوا بولا اور گھروں پر حملہ کیا۔ اس موقع پر فلسطینی نوجوان انہیں روکنے کے لیے سڑکوں پر نکل آئے ۔ اس دوران اسرائیلی پولیس آبادکاروں کو سیکورٹی فراہم کرتی رہی اور انہیں جوابی کارروائی سے بچانے کے لیے فلسطینیوں پر تشدد کرتی رہی۔ دوسری جانب صہیونی فوج کی فائرنگ سے رام اللہ میں دیر ابو مشعل گاؤں سے تعلق رکھنے والا فلسطینی زخمی ہو گیا۔ مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق قابض فوج نے فلسطینی شہری رام اللہ کے مغرب میں دیر نظام گاؤں کے قریب پر یہود آبادکاروں کی گاڑیوں پر فائرنگ کر رہا تھا۔قابض فوج نے کارروائی کے بعد دیرنظام گاؤں کے مرکزی داخلی دروازے کو بند کر دیا،جب کہ زخمی کی صحت کے بارے میں کوئی معلومات فراہم نہیں کی گئیں۔ ادھر اسرائیلی فوجیوں نے جنوبی غزہ میں کسانوں اور غزہ کے ساحلی علاقے میں ماہی گیروں پر مشین گن سے فائرنگ کی ۔ فلسطینی ذرائع ابلاغ کے مطابق قابض فوجیوں نے غزہ کے جنوب میں خان یونس کے مشرقی علاقے میں اپنی زمینوں پر کام کرنے والے کسانوں پر فائرنگ کی۔ صہیونی فوج نے غزہ کے شمالی ساحلی علاقے میں فلسطینی ماہی گیروں کو نشانہ بنایا، تاہم ان واقعات میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔