کرپشن فری پاکستان کے لیے عوام کے تعاون کی ضرورت ہے، چیئرمین نیب

100

چیئرمین قومی احتساب بیورو (نیب) جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ نیب کے راستے میں کوئی رکاوٹ نہیں اگر رکاوٹ ہو بھی اسے عبور کریں گے اور وہ وقت دور نہیں جب پاکستان کرپشن فری ہوجائے گا۔

کراچی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا کہ کہ نیب کا مقصد صرف اور صرف پاکستان اور پاکستانی عوام کی خدمت کرنا ہے اور کرپشن فری پاکستان  کے لیے عوام کے تعاون کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ احتساب سب کے لیے ہے اور اسی پر یقین رکھتے ہیں، یہ سوچ کر کرپشن نہ کریں کہ کسی کو کچھ علم نہیں، کسی افسر کے خلاف شواہد ہیں تو اس کے خلاف بھی  ایکشن ہوگا۔

نیب چیئرمین کا کہنا ہے کہ نیب کا سیاست سے کوئی تعلق تھا، نہ ہے اور نہ ہی حکومت سے کسی قسم کا کوئی سروکار۔ حکومتیں آتی جاتی رہتی ہیں تاہم نیب بھی ریاستی ادارہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ  سپریم کورٹ رولز میں اپیل کے لیے ترمیم ہونی چاہیے، الزام برائے الزام نہیں لگنا چاہیے، ہم کوئی سیاسی انتقام نہیں لے رہے ہیں، جہاں زیادہ وسائل تھے وہاں بے دردی سے لوٹا گیا، جہاں وسائل کم تھے وہاں بھی لوٹ مار کی گئی۔

نیب چیئرمین نے مزید کہا  کہ جنگل میں منگل کے دن گزر گئے، ماضی میں جن سے سوال کرنا مشکل تھا وہ آج قانون کی گرفت میں ہیں، چند ماہ میں 4 ارب سے زائد کی ریکوری صرف سندھ سے کی گئی۔