کے الیکٹرک میں خواتین میٹر ریڈرز تعینات

126

کراچی: بجلی کی ترسیل کرنے والے ادارے کے الیکٹرک نے میٹر ریڈنگ کے لیے خواتین کو تعینات کردیا، کے الیکٹرک کا یہ اقدام کم پڑھی لکھی خواتین کے لیے ایک اچھے موقع کی صورت میں سامنے آیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کے الیکٹرک کی جانب سے ٹویٹ کیا گیا جس میں بتایا گیا کہ ادارے میں پہلی بار خواتین میٹر ریڈر کو رکھا گیا ہے۔ خواتین کا یہ پہلا بیج کراچی کے علاقے لیاری میں اپنی ذمہ داریاں انجام دے رہا ہے۔

میٹر ریڈرز کے طور پر کام کرنے والی یہ خواتین متوسط طبقے سے تعلق رکھتی ہیں جبکہ ان کی تعلیم بھی واجبی سی ہے، البتہ یہ خواتین کام کر کے اپنے گھر اور معاشرے کے معاشی عمل میں حصہ بننے کا عزم رکھتی ہیں۔

ایک خاتون کا کہنا ہے کہ پڑھی لکھی لڑکیوں اور خواتین کو آگے آنا چاہیئے اور معاشی عمل میں اپنا ہاتھ بٹانا چاہیئے۔ ایک اور خاتون نے بتایا کہ وہ ملازمت کے ساتھ ساتھ اپنے گھر اور بچوں کی ذمہ داری بھی سنبھال رہی ہیں۔

ایک خاتون کا کہنا ہے کہ پڑھی لکھی لڑکیوں اور خواتین کو آگے آنا چاہیئے اور معاشی عمل میں اپنا ہاتھ بٹانا چاہیئے۔ ایک اور خاتون نے بتایا کہ وہ ملازمت کے ساتھ ساتھ اپنے گھر اور بچوں کی ذمہ داری بھی سنبھال رہی ہیں۔

ان تمام خواتین کو نہایت حوصلہ افزا ردعمل موصول ہورہا ہے۔ میٹر ریڈنگ کے لیے یہ جہاں بھی جاتی ہیں ان کے ساتھ بے حد تعاون کیا جاتا ہے جبکہ دفتر کا ماحول بھی اچھا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بھی کے الیکٹرک کے اس اقدام کو پسند کیا جارہا ہے، لوگوں نے کے الیکٹرک کے اس اقدام کی تعریف کی جبکہ کچھ افراد نے مشورہ دیا کہ اونچے عہدوں پر پالیسی سازی کے عمل میں بھی خواتین کو شامل کیا جائے۔