پی ایس او کی آمدنی میں 100فیصد اضافہ،ایک کھرب 60ارب روپے منافع حاصل

159
profit

اسلام آباد: پی ایس او نے گزشتہ مالی سال ایک کھرب 60ارب روپے منافع کمایا،منافع میں 195 فیصدکا اضافہ،کل آمدنی سو فیصد اضافے سے 20کھرب 45ارب روپے تک جا پہنچی۔

پاکستان اسٹیٹ آئل لمیٹڈ کے فنانس منیجر فرخ مقیم نے ویلتھ پاک کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو پیداواری صلاحیت کو بڑھانے اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے لیے اپنی معیشت میں موجود عدم توازن کو دور کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ ملک جس سیاسی پولرائزیشن میں ڈوبا ہوا ہے اس نے معیشت کوبہت زیادہ نقصان پہنچایا ہے۔

فرخ مقیم کا کہنا تھا کہ سیلاب سے ہونے والی تباہی نے مہنگائی کے دباو کو مزید ہوا دی ہے جس سے کمپنیوں کے منافع میں کمی آئی ہے۔ ان تمام عوامل نے کاروبار کے لیے غیر یقینی صورتحال میں اضافہ کیا ہے۔ سپلائی چین میں رکاوٹوں اور بین الاقوامی سطح پر اجناس کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کی وجہ سے جاری جغرافیائی سیاسی تناؤنے پاکستان میں اقتصادی ترقی کو بھی متاثر کیا ہے۔ تاہم، ان چیلنجوں کے باوجود، ہماری کمپنی مضبوط اقدامات کے ساتھ برقرار ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ایس او نے مالی سال 21 میں 1.2 ٹریلین روپے سے زیادہ 2.45 ٹریلین روپے کی آمدنی حاصل کی، جس میں سال بہ سال 104 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ مالی سال 22 کا مجموعی منافع 160 بلین روپے رہا جو مالی سال 21 میں 54 ارب روپے کے منافع سے 195 فیصد زیادہ ہے۔ سال کے لیے بعد از ٹیکس منافع 196 فیصد کی شرح نمو کے ساتھ مالی سال 21 میں 29 ارب روپے سے بڑھ کر 86 ارب روپے ہو گیا۔