فرانس نے پاکستان کو قرض واپسی کے لیے بڑی رعایت دے دی

171

اسلام آباد: فرانس نے جی 20فریم ورک کے تحت پاکستان کا قرض 6سال کے لیے مؤخر کر دیا۔ اس سلسلے میں پاکستان اور فرانس نے پاکستان کے ذمے واجب الادا 107 ملین ڈالرز قرض کی واپسی کی مدت میں توسیع کے لیے معاہدے پر دستخط کرلیے۔

ترجمان وزارت اقتصادی امور کے مطابق پاکستان کو اس قرضے کی ادائیگی جولائی تا دسمبر 2021 کے دوران کرنا تھی، تاہم معاہدے پر دستخط کے بعد اب یہ قرضہ 6 سال کی مدت میں سال میں 2 اقساط کی صورت میں ادا کرنا ہوگا، جس میں ایک سال کی رعایتی مدت بھی شامل ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان اس سے قبل ڈی ایس ایس آئی کے تحت فرانس کے ساتھ 261 ملین ڈالرقرضہ معطلی کے معاہدوں پر بھی دستخط کرچکا ہے۔ گروپ 20 کے ممالک نے کورونا وائرس کی عالمگیر وبا کے تناظر میں ترقی پذیر ممالک کو وبا سے نمٹنے کے لیے ضروری مالی گنجائش کی فراہمی کے لیے یہ اسکیم شروع کی تھی۔

پاکستان کے ترقیاتی شراکت دارممالک اور اداروں نے وبا کی مدت میں صحت اور اقتصادی شعبہ میں ضروری اخراجات کے لیے مالی گنجائش فراہم کرنے میں اپنا کردار ادا کیا ہے۔ دونوں ممالک کے مابین معاہدے پر سیکرٹری اقتصادی امور میاں اسد اور فرانسیسی سفیر نیکلس ڈیلے نے دستخط کیے ہیں-