بھارت میں مشتعل ہجوم کی چرچ میں تھوڑ پھوڑ، مقدمہ درج

188

نئی دہلی: بھارت میں مشتعل ہجوم نے چرچ پر حملہ کرکے توڑ پھوڑ اور ہنگامہ آرائی کی جس کے نتیجے میں نہ صرف چرچ کی عمارت کو نقصان پہنچا بلکہ ایک شخص زخمی بھی ہوگیا۔

عالمی  میڈیا رپورٹس کے مطابق مٹیالہ روڈ پر حال ہی میں قائم کیے گئے چرچ پر مشتعل افراد نے اس وقت حملہ کردیا جب وہاں پہلی بار دعائیہ تقریب کی جا رہی تھی،مشتعل ہجوم اور چرچ میں عبادت کےلئے آنے والوں کے درمیان تکرار لڑائی جھگڑے تک جا پہنچی جس میں چرچ کو نقصان پہنچا اور ایک شخص زخمی ہوگیا۔

عبادت کیلئے آنیوالوں کا کہنا تھا کہ یہ عارضی عبادتگاہ ہے جبکہ مشتعل ہجوم نے کہا کہ چرچ کو بعد میں مستقل طور پر تعمیر کردیا جائےگا جس کے بعد یہ مسئلہ پولیس تک پہنچا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ مقامی شرپسندوں کے ایک گروپ نے گودام کو چرچ میں منتقل کرنے کی مخالفت کرتے ہوئے عبادت کےلئے آنے والوں کو روکا جس پر جھگڑا ہوگیا۔

پولیس نے چرچ میں عبادت کےلئے آنے والوں پر کورونا پابندیوں کی خلاف ورزی پر مقدمہ درج کرلیا جب کہ دوسرے گروپ پر چرچ پر حملے اور تھوڑ پھوڑ کا مقدمہ درج کیا گیا۔