“سندھ حکومت بلدیاتی انتخابات نہ کراکے جاگیردارانہ نظام کو مسلط رکھنا چاہتی ہے”

172

کراچی:امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت بلدیاتی انتخابات نہ کراکے عوام کے جمہوری حق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے اور صوبے بھر میں جاگیردارانہ نظام کو مسلط رکھنا چاہتی ہے۔

حافظ نعیم الرحمن  نے مسائل کے حل کے لیے بلدیاتی انتخابات کے فوری انعقاد کے حوالے سے جماعت اسلامی کے رکن سندھ اسمبلی سید عبد الرشید کی تحریک التواءکو مسترد کرنے پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پیپلز پارٹی اور سندھ حکومت بلدیاتی انتخابات کے مسلسل زیر التواءرکھ کر  ، عوام کو قانونی حق سے محروم رکھنا چاہتی ہے۔

امیر جماعت اسلامی کراچی کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی  کراچی میں اپنا پارٹی ایڈمنسٹریٹر لگا کر شہر قائد پر قبضہ کرنے اور بلدیاتی وسائل اور اختیارات کے ذریعے اپنی من مانی کرنا چاہتی ہے۔

حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ وفاق اور سندھ حکومت اہل کراچی کی عوام  سے سخت خوفزدہ ہے اسی لیے وہ بلدیاتی انتخابات کرانے کے لیے تیار نہیں اور نت نئے بہانے اور لیت و لعل سے کام لے رہی ہے۔

 حافظ نعیم الرحمن نے مطالبہ کیا ہے سندھ حکومت تاخیری حربے استعمال کرنے اور مردم شماری کو بہانہ بنانے کے بجائے فوری طور پر بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کا اعلان کرے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ تین کروڑ سے زائد عوام کے گھمبیر مسائل کے حل کے لیے کراچی میں با اختیار شہری حکومت کا قیام یقینی بنایا جائے ، میئر کا انتخاب براہ راست کرایا جائے اور اس کے لیے موجودہ لوکل باڈی ایکٹ ختم کیا جائے ۔