جاپان: ریل گاڑی میں خنجر سے حملہ‘ 10 افراد زخمی

110
ٹوکیو: چاقو حملے کے بعد اسٹیشن کو سیل کردیا گیا ہے‘ زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا جارہا ہے

ٹوکیو (انٹرنیشنل ڈیسک) جاپان کے شہر ٹوکیو میں ریل گاڑی میں دوران سفر چاقو حملے کے نتیجے میں 10افراد زخمی ہوگئے۔ حملہ آور کی شناخت 36 سالہ یوسو کیسو شیما کے نام سے ہوئی،جو خواتین کو قتل کرنا چاہتا تھا۔ خبررساں اداروں کے مطابق چاقو کے وار سے گھائل 20سالہ طالبہ کی حالت نازک ہے،جب کہ دیگر کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ ٹوکیو پولیس کے مطابق مشتبہ شخص نے فرار ہوتے وقت اپنا خنجر وہیں چھوڑ دیا تھا۔ اس نے قریبی اسٹور میں جا کر اپنی شناخت خبروں میں دکھائے جانے والے مشتبہ شخص کے طور پر کرائی۔ اس کا کہنا تھا کہ وہ بھاگ بھاگ کر تھک چکا ہے۔ پولیس نے اسے حراست میں لے کر تفتیش شروع کردی۔ حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آور کے پاس تیل اور لائٹر موجود تھا اور وہ ٹرین کے ڈبے میں آگ لگانا چاہتا تھا۔ واضح رہے کہ جاپان میں فائرنگ سے بہت کم ہلاکتیں دیکھنے میں آتی ہیں، البتہ حالیہ برسوں میں خنجر کے ذریعے لوگوں کو نشانہ بنانے کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔ 2019 ء میں ایک شخص نے بس کے انتظار میں کھڑی لڑکیوں پر خنجروں سے حملہ کیا تھا، جس کے نتیجے میں 2خواتین ہلاک اور 17 زخمی ہوگئی تھیں۔ کارروائی کے بعد حملہ آور نے خود کو بھی ہلاک کر لیا تھا۔